خیبرپختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے بین الصوبائی رابطہ کا اجلاس

خیبرپختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے بین الصوبائی رابطہ کا اجلاس

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے بین الصوبائی رابطہ کا اجلاس چیئرمین کمیٹی سردار حسین بابک کی سربراہی میں منعقد ہوا۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے مشیر برائے توانائی حمایت اللہ خان بھی موجود تھے۔ قائمہ کمیٹی کے ممبران ایم پی ایز احمد خان کنڈی، سراج الدین، ملک واجد اللہ، عباس الرحمن، نعیمہ کشور اور آسیہ صالح خٹک سمیت محکمہ توانائی اور خزانہ کے اعلیٰ حکام نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس میں تیل، گیس اور آبی ذخائر سے حاصل محصولات سے متعلق بریفنگ دی گئی۔ مشیر توانائی حمایت اللہ خان نے اجلاس کو بتایا کہ صوبائی حکومت نے تیل و گیس رائلٹی کے علاوہ خالص بجلی منافع کے حصول کے لیے بہتر انداز میں اقدامات اٹھائے ہیں اور اس ضمن میں وفاق سے صوبے کو بقایاجات کی ادائیگی کے لیے دیرپا حکمت عملی اور میکنزم پر کام جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ مشترکہ مفادات کونسل میں بھی خیبرپختونخوا کے موقف کو تسلیم کیا گیا ہے۔ اجلاس میں صوبے کے حقوق کیلئے اجتماعی طور پر  کوششیں کرنے پر اتفاق کیا گیا۔ اس موقع پر چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے بین الصوبائی رابطہ ایم پی اے سردار بابک حسین کا کہنا تھا کہ بجلی کی مد میں صوبے کے وفاق کے ذمے تمام واجبات فوری ادا ہونے چاہیں۔ اسی طرح خیبرپختونخوا سے حاصل ہونے والا خام تیل دوسری صوبوں کی ریفائنریز میں جاتا ہے جبکہ یہاں ریفائنری کیلئے خریدی گئی اراضی پر جلد کام شروع کیا جائے۔ آئل ریفائنری کے فعال ہونے سے صوبے کی آمدنی میں اضافہ ہوگا۔ چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے بین الصوبائی رابطہ نے کہا کہ قائمہ کمیٹی ممبران صوبے میں قائم مختلف آئل اینڈ گیس فیلڈز کا دورہ بھی کریں گے۔ 

مزید :

صفحہ اول -