انجلینا جولی دورہ عراق کے دوران کرد لوگوں کی نسل کشی کے متعلق جان کر رو پڑیں

 انجلینا جولی دورہ عراق کے دوران کرد لوگوں کی نسل کشی کے متعلق جان کر رو پڑیں
 انجلینا جولی دورہ عراق کے دوران کرد لوگوں کی نسل کشی کے متعلق جان کر رو پڑیں

  

بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک) ہالی ووڈ اداکارہ انجلینا جولی نے بدھ کے روز عراق کا دورہ کیا۔آسکر ایوارڈ یافتہ اداکارہ نے اپنے انسٹاگرام اکاﺅنٹ پر اپنے اس دورے کی تصاویر پوسٹ کیں اور عراق میں یزیدی لوگوں کی نسل کشی کے متعلق مقامی لوگوں کی باتیں سنتے ہوئے آبدیدہ ہو گئیں۔

میل آن لائن کے مطابق اپنی ایک پوسٹ میں انجلینا جولی نے اپنی ایک تصویر پوسٹ کی جس میں ان کی آنکھوں میں آنسو ہوتے ہیں، اس تصویر کے ساتھ کیپشن میں انہوں نے لکھا کہ ”میں نے عراق میں اپنی دوست نادیہ مراد کے ہمراہ ایک جذباتی دن گزارا، ہم نے یہ دن عراق کے علاقے سنجار میں گزارا۔“

نادیہ مراد نوبل انعام یافتہ شخصیت ہیں اور وہ عراق میں جنگ کے متاثرین کے لیے کام کر رہی ہیں۔ انجلینا جولی نادیہ مراد کے ساتھ مل کر پہلے بھی عراق کے جنگ زدہ لوگوں کے لیے گراں قدر خدمات سرانجام دے چکی ہیں۔انجلینا جولی کہتی ہیں کہ ”ہمیں بتایا گیا کہ کس طرح داعش کے شدت پسند دیہات پر دھاوا بولتے اور مردوخواتین کو الگ کردیتے تھے۔“

انجلینا جولی کہتی ہے کہ یزیدی مردوخواتین کو الگ کرنے کے بعد تمام مردوں کو قتل کر دیا جاتا اور خواتین کو جنسی غلام بنا کر ساتھ لے جاتے اور منڈیوں میں انہیں جانوروں کی طرح فروخت کیا جاتا۔واضح رہے کہ عراق کے ضلع سنجار میں یزیدی آبادی اکثریت میں تھی اور انہی لوگوں کو داعش کے شدت پسندوں نے سب سے زیادہ نشانہ بنایا تھا۔

مزید :

تفریح -