وہ مصالحے جو انسان کو کینسر سے محفوظ رکھتے ہیں

وہ مصالحے جو انسان کو کینسر سے محفوظ رکھتے ہیں
وہ مصالحے جو انسان کو کینسر سے محفوظ رکھتے ہیں

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (نیوز ڈیسک) کینسر کا موذی مرض ایک دفعہ انسانی جسم میں داخل ہوجائے تو اس سے نجات بہت مشکل ہے اس لئے بہتر یہی ہے کہ ایسی احتیاطیں اپنائی جائیں کہ جو اس خوفناک بیماری کو پیدا ہونے سے روک سکیں۔ خوش قسمتی سے ہمارے ہاں پائی جانے والی روایتی جڑی بوٹیاں اور مصالحے اس سلسلہ میں بہت مفید ہیں۔ ان میں سے اہم ترین درج ذیل ہیں۔

مچھروں کو کون سا بلڈ گروپ سب سے زیادہ پسند ہوتا ہے؟سائنسی تحقیق میں انکشاف

ہلدی:۔ اس میں طاقتور مادہ پولی فینول کرکمن پایا جاتا ہے جو کینسر کے خلیات کی افزائش روکتا ہے۔
سونف:۔ اس میں فائٹو اجزاء اور اینٹی آکسیڈنٹ مادے پائے جاتے ہیں اور خصوصاً اینی تھول نامی مادہ کینسر کے خلیوں کے پھیلاؤ کو روکتا ہے۔
رعفران:۔ اس میں کینسر سے لڑنے والا مادہ کروسیٹین پایا جاتا ہے، یہ کینسر کی رسولیوں کا سائز بھی کم کرتاہے، البتہ یہ بہت مہنگا ہوتا ہے۔
زیرہ:۔ یہ نہ صرف ہاضمے کیلئے بہترین ہے بلکہ اس میں اینٹی آکسیڈنٹ مرکبات اور تھائموکیفون بھی پایا جاتا ہے جو پراسٹیٹ کینسر سے بچاتا ہے۔
ہری مرچ:۔ مرچیں جسم میں اپپوٹوسس نامی عمل پیدا کرتی ہیں جو کینسر کے خلیوں کو پیدا ہونے سے پہلے ہی ختم کردیتا ہے، مرچوں کی زیادہ مقدار سے بچنا چاہیے۔
ادرک:۔ ادرک کولیسٹرول کو کم کرتا ہے، میٹابولزم کو بہتر کرتا ہے اور کینسر کے خلیوں کو ختم کرتا ہے۔
اس کے علاوہ لونگ، پودینہ، لہسن، لیموں، سرکہ اور زیتون کا تیل بھی غذا میں شامل کریں کیونکہ یہ سب غذائیں قوت مدافعت بڑھاتی ہیں اور کینسر سے بچانے میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔

مزید :

تعلیم و صحت -