وہ ملک جہاں "سکائپ" استعمال کرنے پر جیل بھیج دیا جاتاہے

وہ ملک جہاں "سکائپ" استعمال کرنے پر جیل بھیج دیا جاتاہے
وہ ملک جہاں

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ادیس ابابا (نیوز ڈیسک) اگرچہ ہم یوٹیوب کی بندش اور انٹرنیٹ پر لگائی جانے والی دیگر پابندیوں پر بہت کڑھتے ہیں لیکن پھر بھی ہمیں خوش ہونا چاہیے کہ ہم ایتھوپیا کے شہری نہیں کہ جہاں سکائپ استعمال کرنے والوں کو 15 سال کیلئے جیل جانا پڑ سکتا ہے جبکہ باقی سوشل میڈیا استعمال کرنے کے نتائج بھی کچھ زیادہ مختلف نہیں ہوتے۔
سستے لباس نے خوبرو لڑ کی کی جان بچا لی
ایتھوپیا کی حکومت نے پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا پر پہلے ہی سخت پابندیاں عائد کررکھی ہیں اور اب انٹرنیٹ کا ناطقہ بند کیا جارہا ہے۔ حکومت سوشل میڈیا سے خصوصی طور پر ناراض ہے کیونکہ لوگ اسے استعمال کرتے ہوئے حکمرانوں کی جابرانہ پالیسیوں پر تنقید کرتے ہیں اور اکثر اوقات ان پر قابو پانا مشکل ہوتا ہے۔
بین الاقوامی تنظیم ’’رپورٹرز وداؤٹ بارڈرز‘‘ کا کہنا ہے کہ ایتھوپیا کی حکومت اظہار رائے کا ہر راستہ بند کرنا چاہتی ہے۔ دوسری جانب حکومت کا کہنا ہے کہ سکائپ کا استعمال غیر قانونی نہیں ہے لیکن اسے فراڈ کیلئے استعمال کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -