میلینیم ڈویلپمنٹ اہدافکے لئے 2ارب روپے مختص ہیں،مجتبیٰ شجاع

میلینیم ڈویلپمنٹ اہدافکے لئے 2ارب روپے مختص ہیں،مجتبیٰ شجاع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور( جنرل رپورٹر) وزیر قانون ، ایکسائز و ٹیکسین ، خزانہ پنجاب مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا ہے کہ ملینیم ڈویلپمنٹ اہداف کے لئے 2ارب روپے مختص ہیں اور صوبہ میں متعدی و غیرمتعدی امراض پر قابو پانے کے لئے ہیلتھ سیکٹر کو مطلوبہ فنڈز فراہم کئے جارہے ہیں -انہوں نے کہا کہ حکومت تو شعور بیدار کرنے اور علاج معالجہ کے لئے اپنے وسائل فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی ڈونراداروں جیسے یونیسف اور ڈبلیو ایچ او کا تعاون بھی حاصل کررہی ہے،سادہ خوراک صبح کی سیر اور سادہ طرز زندگی اپنانے سے ذیابیطس، دل اور دوسری خطرناک بیماریوں سے بچا جاسکتا ہے ۔انہوںنے کہا کہ دل کی بیماریوں کا رحجان اب نوجوانوں میں بھی نظر آرہا ہے اور 45 سال سے زائد عمر کے 40 فیصد افراد جبکہ 65 سال سے زائد عمر کے افراد میں 7 فیصد افراد دل کے مختلف عارضوں میں مبتلا ہیںجبکہ نوجوانوں میں کولیسٹرول لیول زیادہ ہونے کی بھی شکایات آرہی ہیں اپنی رہائش گاہ پر پارٹی ورکرزپارٹی ، ڈاکٹرزو این جی اوز کے وفود سے خطاب کرتے ہوئے مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا کہ صوبہ میں صحت کی معیاری سہولیات کی فراہمی کیلئے ریکارڈ بجٹ فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ نسبتاً کم ترقی یافتہ اضلاع میں ہیلتھ انشورنس سکیم کا اجراءبھی کیا جارہا ہے جس سے کم آمدنی والے افراد سرکاری ہسپتالوں کے علاوہ بہترین نجی طبی اداروں میں علاج کی مفت سہولت حاصل کر سکیں گے- انہوں نے کہا کہ کم وسیلہ افراد کو صحت کی معیاری سہولیات و ادویات کی بلامعاوضہ فراہمی کے لئے 8 -ارب75 کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں، ماں و بچوں کو تشخیص و ادویات کے منصوبہ کے لئے 1 - ارب 80 کروڑ روپے جبکہ متعدی امراض کے کنٹرول کے لیے 2۔ا رب روپے مختص ہیں۔
 انہوں نے کہا کہ کم وسیلہ افراد کو صحت کی بلا معاوضہ سہولیات کی فراہمی کے سلسلے میں سماجی خدمات سرانجام دینے اوروقت و سرمایہ وقف کرنے والے مخیرحضرات معاشرے کا اثاثہ ہیں اور حکومت ہمیشہ ایسے افراد اور اداروں کی حوصلہ افزائی کرے گی۔