شمالی وزیر ستان میں غازی فورس کے زیر استعمال عمارت اوردیگر شواہد مل گئے

شمالی وزیر ستان میں غازی فورس کے زیر استعمال عمارت اوردیگر شواہد مل گئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) شمالی وزیرستان میں جاری آپریشن ضرب عضب کے دوران سکیورٹی فورسز کو لال مسجد کے عبدالرشیدغازی کے نام پربننے والی ’’ غازی فورس ‘‘کے پاکستان میں مسلح افواج، اقلیتوں اورعوام کے خلاف دہشت گرد حملوں میں ملوث ہونے کے ناقابل تردید شواہد ملے ہیں۔تفصیلات کے مطابق شمالی وزیرستان میں دہشتگردوں کے زیراثررہنے والے علاقوں درگاہ منڈی ، دردونی وغیرہ میں کلیئرنس آپریشن کے دوران غازی فورس کے زیراستعمال رہنے والی عمارت پکڑی گئی ہے۔مذکورہ عمارت 3مکانات پرمشتمل تھی جنہیں ایک 30میٹر طویل سرنگ کے ذریعے جوڑا گیا تھا اور فرارکا زیرزمین راستہ بھی تھا۔ اس عمارت میں زیرزمین بڑے کمرے اورلائبریری تھی جو سرنگ سے ایک دوسرے سے جڑے تھے۔ ذرائع کے مطابق اس عمارت کی تلاشی کے دوران پتہ چلاکہ ایک کمرہ بارودی مواد یعنی آئی ای ڈی کی تیاری جب کہ دوکمرے دہشت گردوں کی تربیت اوربرین واشنگ کے لئے استعمال کیے جاتے تھے۔سکیورٹی ذرائع کے مطابق شواہد سے تصدیق ہوتی ہے کہ یہاں رہنے والے دہشت گردوں کی لال مسجد کے مولانا عبدالعزیز اوران کے بھائی غازی عبدالرشید سے گہری وابستگی ہے اور میرانشاہ میں اس فورس کی سرگرمیوں سے ملک میں امن وامان کا مسئلہ کس طرح خراب ہوا۔تفصیل کے مطابق یہاں سے الیاس نامی ایک شخص کی ڈائری بھی برآمدہوئی جس میں ملک کی مختلف جیلوں میں قید دہشت گردوں کی مکمل تفصیلات اورڈیٹا موجود ہے۔ ڈائری میں مختلف عدالتوں سے سزاپانے والے دہشت گردوں اوران کے مقدمے کی تازہ ترین عدالتی صورتحال بھی درج ہے۔ڈائری میں غازی فورس کا تنظیمی ڈھانچہ، مختلف عہدوں پرکام کرنے والے لوگ اوران کے رابطہ نمبربھی درج ہیں۔ اس میں 2009 ء سے اب تک ہونے والے خودکش حملوں کی تاریخ کے حساب سے ترتیب وارتفصیلات بھی ہیں۔ ذرائع نے بتایاکہ غازی فورس کی اس عمارت سے تربیتی مواد بھی ملاجس سے پتہ چلتاہے کہ یہاں دہشت گردوں کو گوریلا لڑائی کی تربیت دی جاتی تھی۔ مذکورہ مکان سے سے مختلف نوعیت کابارودی مواد، آئی ای ڈی سرکٹ بک، اے کے47 رائفل، گرینیڈ، ڈیٹونیٹر اور دیگر اسلحہ اوراندرونی مواصلاتی نظام ملا۔ایک ہاتھ سے لکھاہوا خط ملاجس میں وحیدہ نامی خاتون ایک دوسری خاتون سائرہ کواپنی بہنوں سمیت غازی فورس میں شمولیت کے لئے قائل کرتی ہے اور رقم بھیجی جاتی ہے جبکہ کچھ لوگوں کے قومی شناختی کارڈ بھی ملے۔ کاغذ کی ایک چھوٹی چٹ میں دہشت گردوں کو فون سم حاصل کرنے میں رہنمائی کی گئی ہے جبکہ اقلیتوں کی ایک عبادت گاہ کانقشہ بھی ملاجس سے معلوم ہوتاہے کہ دہشت گردوں نے حملے کی مکمل تیاری کررکھی تھی۔یہاں ملنے والے موادسے پتہ چلتاہے کہ غازی فورس پاکستان اورفوج مخالف ایجنڈا کے ساتھ نوجوان مردوں اورعورتوں کے ذہنوں کو گمراہ کررہی ہے۔ اس عمارت سے غازی فورس کوملنے والے فنڈز اورعطیات کی کچھ تفصیل بھی ملی ہے۔ جھنگ کے ایک مدرسے کی کیش رسیدسے ظاہر ہوتا ہے کہ غازی فورس کا رقوم کے حصول کے لیے ایک مضبوط نیٹ ورک ہے جبکہ قراقرم کوآپریٹو بینک کاایک چیک بھی ملاہے۔

مزید :

صفحہ اول -