مارکیٹنگ کمپنیوں کے لائسنس منسوخی کیلئے چیئرمین اوگرا کو رپورٹ بھجوا دی گئی

مارکیٹنگ کمپنیوں کے لائسنس منسوخی کیلئے چیئرمین اوگرا کو رپورٹ بھجوا دی گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(خبرنگار) ایل پی جی کی مارکیٹنگ کمپنیوں کے خلاف اوگرا نے گھیرا تنگ کر دیا ہے، اوگرا کے حکم پر گزشتہ روز 50 سے زائد مارکیٹنگ کمپنیوں میں سے 16 کمپنیوں کے خلاف کارروائی کو حتمی شکل دے دی گئی ہے اور مارکیٹنگ کمپنیوں کے خلاف جرمانے اور ان کے لائسنس کی منسوخی کے لئے چیئرمین اوگرا کو رپورٹ بھجوا دی گئی ہے، دوسری جانب ایل پی جی مافیا کا مکمل طور پر خاتمہ نہیں کیا جا سکا ہے، ایل پی جی کی مصنوعی قلت، بلیک میں فروخت اور اوگرا کی جانب سے مقرر کردہ قیمتوں سے زائد نرخوں پر فروخت کا سلسلہ تاحال جاری ہے جس پر اوگرا کے حکم پر گزشتہ روز بھی چھاپوں کا سلسلہ جاری رہا ہے۔ لاہور میں گزشتہ روز بھی ایل پی جی 150 روپے سے 170 روپے تک فروخت کی گئی ہے جس پر چھاپہ مار ٹیموں نے 32 سے زائد ڈیلروں کے خلاف ایل پی جی مہنگی فروخت کرنے پر کارروائی کی گئی ہے جس میں 20 دکانداروں کو پولیس کے حوالے کیا گیا ہے۔ ادھر ایل پی جی سیل پوائنٹ ایسویسی ایشن کے چیئرمین فیاض خان نے دکانداروں کی گرفتاریوں پر شدید احتجاج کرتے ہوئے گیس کی تما م دکانیں بند کر نے کی دھمکی دے دی ہے دوسری جانب گرفتاری کے خلاف شہر بھر کے ایل پی جی ریٹیلز سراپا احتجاج بن گئے گلبرک ٹاؤن کے ریٹیلز کے بطور احتجاج دکانیں بند کر دیں بند روڈ کے ریٹیلز نے امین پارک میں گرفتاریوں اور کریک ڈاؤن کے خلاف آئندہ کے لائحہ عمل طے کرنے کے لئے ہنگامی اجلاس طلب کر لیا شہر میں اسلام پورہ سے آٹھ ، لکشمی چوک سے سات اور مصری شاہ سے پانچ دکانداروں کو 125 روپے فی کلو کے زائد پر گیس فروخت کرنے پر گرفتار کیا گیا ۔ ۔ ایسوسی ایشن کے مطابق ہمیں مارکیٹنگ کمپنیوں کی جانب سے مہنگے داموں گیس مل رہی ہے ہم سے زبردستی 125 روپے کلو کے حساب سے فروخت کروائی جا رہی ہے اس ریٹ پر فروخت سے ہمیں نقصان ہو رہا ہے ۔ڈی سی او کے مطابق صارفین کا استحصال برادشت نہیں کیا جائے گاجن دکانداروں نے دکانیں بند کی ہیں انہوں نے دکانیں نہ کھلیں تو ان کو بھی گرفتار کر لیا جائے گادوسری طرف ایل پی جی سیلز پوائنٹ ایسوسی ایشن کے چیئرمین فیاض خان نے کہا کہ اگر گرفتاریوں کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو مجبوراً تمام دکانیں بند کردیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر ہو گی جب تک ایل پی جی کمپنیاں ہمیں کم ریٹ پر گیس نہیں دیتیں ہم کم نرخوں پر ایل پی جی فروخت نہیں کر سکتے۔ دوسری جانب اوگرا کے حکم پر ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں کے خلاف کی جانے والی کارروائی پر آج چیئرمین اوگرا سماعت کریں گے جس کے بعد بڑے پیمانے پر مارکیٹنگ کمپنیوں کو جرمانے سنائے جانے کی توقع ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -