کشتی معاملہ ، بھارتی میڈیا نے اپنی ہی حکومت اور خفیہ اداروں کی سازش ناکام بنادی

کشتی معاملہ ، بھارتی میڈیا نے اپنی ہی حکومت اور خفیہ اداروں کی سازش ناکام ...
کشتی معاملہ ، بھارتی میڈیا نے اپنی ہی حکومت اور خفیہ اداروں کی سازش ناکام بنادی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت کو ایک مرتبہ پھر پاکستان پر الزام تراشی مہنگی پڑگئی اور اپنے ہی میڈیا نے حکومت اور خفیہ اداروں کی سازش کا بھانڈا پھوڑدیا۔
بھارتی اخبار’انڈین ایکسپریس‘ نے لکھاہے کہ گجرات کے قریب سمندر میں تباہ ہونیوالی کشتی میں دہشتگر د نہیں بلکہ سمگلنگ کا ڈیزل تھا جو دوسری کشتی میں منتقل کیاجاناتھالیکن حادثے کا شکار ہوکر تباہ ہونیوالی کشتی کو بھارتی بحریہ نے اپنا ہی کارنامہ بنا کر پیش کردیا اور دعویٰ کیا کہ تباہ ہونیوالی کشتی میں دہشتگرد اسلحہ و بارودی مواد منتقل کررہے تھے جس کیخلاف کارروائی کے دوران ہی دھماکہ خیز مواد پھٹنے سے کشتی اُڑگئی تھی ۔ انڈین ایکسپریس کے مطابق کشتی کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی بلکہ کشتی خود ہی حادثے کا شکار ہوکر تباہ ہوگئی ۔
 واضح رہے کہ ہمیشہ کی طرح ایک بے بنیاد اور مشکوک کہانی کو پاکستان سے منسلک کرنے میں کسی تاٗمل سے کام نہیں لیا گیا اور فوری طور پر یہ الزام سامنے آگیا کہ اسے کراچی سے روانہ کیا گیا تھا اور اس کا مقصد بھارت پر حملہ کرنا تھا۔ معروضی حالات اس بات کی طرف ضرور اشارہ کرتے ہیں کہ اندریں حالات اس طرح کا ڈھونگ رچانا بھارت کی سخت ضرورت بن چکا تھا۔ پاکستان کے اندرونی حالات اور خصوصاً سانحہ پشاور کے بعد افواج پاکستان اور قوم کی دہشت گردوں کے خلاف یکسوئی کے پیش نظر یہ بات قرین قیاس نہیں کہ پاکستان کی طرف سے بھارت کے خلاف کوئی بھی کارروائی کی جارہی تھی۔ دوسری جانب بھارت میں 26 جنوری کو یوم جمہوریہ منایا جارہا ہے اور اس موقع پر امریکی صدر باراک اوباما کی آمد بھی متوقع ہے۔ بھارتی حکومت نہ صرف اپنی عوام بلکہ امریکہ کو بھی یہ دکھانے کیلئے بے تاب ہے کہ اسے پاکستان سے بہت خطرہ ہے اور ساتھ ہی اپنی افواج کی جعلی کامیابیوں کا ڈھنڈورا پیٹنا بھی مقصود ہے، جس کیلئے اس طرح کا ڈرامہ رچانا ازحد ضروری سمجھا گیا۔
 بھارت کی جانب سے سرحدی خلاف ورزیوں کا سلسلہ تواتر سے جاری رہے اور گزشتہ چند دنوں میں درجنوں بار لائن آف کنٹرول اور بین الاقوامی سرحد پر بلا اشتعال فائرنگ کی جاچکی ہے۔ سال نو کے پہلے ہی دن دو پاکستانی جوانوں کو فلیگ میٹنگ کے بہانے بلا کر ان پر گولیاں برسانا نہایت شرمناک حرکت اور بین الاقوامی قوانین کی بدترین خلاف ورزی تھی اور اس سنگین جرم سے توجہ ہٹانے کیلئے اس سے بہتر حکمت عملی کیا ہوسکتی تھی کہ الٹا پاکستان پر ہی سنگین الزامات لگادئیے جائیں۔ مشکوک کشتی اور پاکستان پر الزامات کا پراپیگنڈہ کرتے ہوئے بھارتی حکام اور میڈیا کو یہ بات نہیں بھولنی چاہئے کہ جھوٹ کا بلبلا تو جلد یا بدیر ختم ہوجائے گا لیکن پاکستان کے خلاف بھارتی جرائم ایک ٹھوس حقیقت ہیں جنہیں کسی بھی پراپیگنڈہ سے چھپایا نہیں جاسکتا۔