چارٹر آف ڈیمانڈ پیش ،مدارس کی طرف ہاتھ بڑھایا تو اچھا نہیں ہوگا:عبدالعزیز

چارٹر آف ڈیمانڈ پیش ،مدارس کی طرف ہاتھ بڑھایا تو اچھا نہیں ہوگا:عبدالعزیز
چارٹر آف ڈیمانڈ پیش ،مدارس کی طرف ہاتھ بڑھایا تو اچھا نہیں ہوگا:عبدالعزیز

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ویب ڈیسک) لال مسجد کے خطیب مولوی عبدالعزیز نے ملک میں فوری طور پر نفاذ شریعت کا مطالبہ کرتے ہوئے 30 سے زائد نقات پر مشتمل چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا ہے، مولوی عبدالعزیز نے کہا ہے کہ انہیں جو لوگ برا بھلا کہہ رہے ہیں میں انہیں معاف کرتا ہوں،لیکن یہ واضح ہوں کہ مساجد و مدارس کی بے حرمتی کسی طور پر بھی برداشت نہیں کی جائے گی، کسی نے مساجد و مدارس کی طرف ہاتھ بڑھایا تو ہماری جانیں حاضر ہوجائیں گی ۔ تفصیلات کے مطابق سول سوسائٹی کی جانب سے درج کرائی گئی ایف آئی آر پر وارنٹ گرفتاری جاری ہونے کے بعد خطیب لال مسجد مولوی عبدالعزیز نے کہ ملک کی موجودہ صورتحال پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوری طور پر نفاذ شریعت کا اعلان کرے۔
انہوں نے کہا کہ یہ وقت خون خرابہ کا نہیں بلکہ ایک دوسرے کو معاف کرنے کا ہے۔ ایک دوسرے کو مارنے کے بجائے معاف کرتے ہوئے ملک میں نفاذ اسلام کرکے نئے سفرکا آغاز کیا جائے۔ کچھ مخصوص فکر کے لوگ ہم پر آج الزامات لگا کر یہ سمجھتے ہیں کہ ہم نفاذ اسلام کا مطالبہ ترک کردیں گے لیکن یہ ان کی خام خیالی ہے، ہم تو وہ دیوانے ہیں جو اتنے بڑے سانحہ کے بعد آج بھی اپنے موقف پر ڈٹے ہوئے ہیں، سول سوسائٹی سمیت جو بھی ہمارے خلاف پراپیگنڈہ کررہے ہیں وہ سن لیں کہ ہم زندگی کے آخری دن تک ملک میں نفاذ اسلام کا مطالبہ کرتے رہیں گے۔

مزید :

اسلام آباد -