پنچایت کے حکم پر بھارت میں لڑکی سے انسانیت سوز سلوک

پنچایت کے حکم پر بھارت میں لڑکی سے انسانیت سوز سلوک
پنچایت کے حکم پر بھارت میں لڑکی سے انسانیت سوز سلوک

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نئی دہلی (نیوز ڈیسک) بھارت میں زمانہ جاہلیت کی یاد تازہ کرنے والا ایک تازہ ترین واقع ریاست مدھیا پردیش میں پیش آیا ہے جہاں ایک خاتون کو بدکردار قرار دے کر ایک نام نہاد پنچایت کی طرف سے حکم دیا گیا کہ وہ سارے گاﺅں کے سامنے اپنے مبینہ آشنا کو اپنی چھاتی کا دودھ پلائے۔

دکھی ماں نے داعش سے درد بھر ی اپیل کر دی ،جاننے کے لئے کلک کریں
 پولیس کے مطابق یہ شرمناک واقع واردھا گاﺅں میں پیش آیا جہاں 24 سالہ خاتون پر اس کے خاوند کی طرف سے الزام لگایا گیا تھا کہ اس کے کملیش نامی نوجوان سے تعلقات ہیں۔ بدبخت خاوند اپنی بیوی کو خود ہی ایک مقامی پنچایت میں لے کر گیا جس نے پہلے تو دونوں کے سر مونڈھنے اور تشدد کا حکم دیا اور اس کے بعد خاتون کو حکم د یا کہ وہ اپنا دودھ اپنے مبینہ آشنا کو پلائے۔ مقامی میڈیا کے مطابق یہ ساری کارروائی گاﺅں والوں کے سامنے ہوئی اور کسی نے اس کے خلاف آواز تک نہ اٹھائی، البتہ بدبخت شوہر غیر متوقع سزا سنائے جانے پر اسے رکوانے کی کوشش ضرور کرتا رہا لیکن کسی نے اس کی بات پر توجہ نہ دی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ پنچایت میں شامل چند افراد کو گرفتار کرلیا گیا ہے جبکہ باقی کی تلاش جاری ہے۔

مزید :

انسانی حقوق -