وفاقی حکومت دو رخی پالیسی پر عمل پیرا ہے:تحریک انصاف رہنماکا الزام

وفاقی حکومت دو رخی پالیسی پر عمل پیرا ہے:تحریک انصاف رہنماکا الزام
وفاقی حکومت دو رخی پالیسی پر عمل پیرا ہے:تحریک انصاف رہنماکا الزام

  

جدہ (محمد اکرم اسد) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما و ممتاز سرمایہ کار ممتاز اختر کاہلوں نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت دو رخی پالیسی اپنائے ہوئے ہے ایک طرف وہ سندھ حکومت کو ناراض نہیں کرنا چاہتی اور دوسری طرف افواج پاکستان سے بھی ہم خیالی کا دم بھرتے ہیں۔ یہ پالیسی ملک میں دیرپا قیام امن کے لئے نقصان دہ ہوگی۔ اگر حکمران ایماندار ہوں تو کوئی وجہ نہیں کہ ملک ترقی نہ کرے ، ہمیں ایماندار اور مخلص قیادت کی ضرورت ہے جس طرح پاکستان قدرتی وسائل سے مالا مال ہے اسی طرح ہمارے لوگ بھی انتہائی ذہین ہیں جس ملک میں گئے وہاں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے نمائندہ سے خصوصی بات چیت میں کیا۔

انہوں نے کہا کہ تارکین وطن کو ووٹ کا حق دینا چاہیے جس کے لئے پاکستان تحریک انصاف سپریم کورٹ میں دوبارہ جائے گی۔ ممتاز کاہلوں نے کہا کہ ہمارے ارباب اقتدار ملکی وسائل کو قوم پر خرچ کرنے کی بجائے اپنی ذات پر خرچ کررہے ہیں محض لاہور ہی پورا پاکستان نہیں، حکومت میٹرو کے بعد اب اورنج ٹرین منصوبے پر 200 ارب روپے خرچ کررہی ہے جس سے دیگر صوبوں میں احساس محرومی پیدا ہونا فطری بات ہے۔ مرکز کو تمام صوبوں کی یکساں ترقی کے لئے کام کرنا چاہیے محض لاہور اور رائیونڈ کو سامنے رکھتے ہوئے کام کرنا کسی طور پر مناسب نہیں ۔ وطن عزیز کی ترقی کے لئے ضروری ہے کہ موجودہ فرسودہ نظام سے جان چھرائی جائے اور قوم کو اسلامی اصولوں پر مبنی معاشرہ دیا جائے جس میں اول و انصاف کی فراوانی ہو، ہر ایک کو اس کا جائز حق ملے ۔ ملکی معیشت میں کراچی کی حیثیت ریڑھ کی ہڈی کی ہے وہاں مستقبل بنیادوں پر قیام امن انتہائی ضروری ہے۔ ممتاز کاہلوں نے حالیہ بلدیاتی انتخابات کے نتائج کے حوالے سے کہا کہ یہ بات ہر شخص جانتا ہے کہ انتخابات میں دھاندلی ہوئی مگر عوامی سطح پر پی ٹی آئی کے گراف میں روز بروز اضافہ ہورہا ہے جبکہ ہمارا ووٹ بنک بھی بڑھا ہے۔

مزید : بین الاقوامی