دہشت گردی کا خاتمہ، جنرل راحیل شریف کا عزم!

دہشت گردی کا خاتمہ، جنرل راحیل شریف کا عزم!

آرمی چیف جنرل راحیل شریف کی یہ پُراعتماد یقین دہانی خوش آئند ہے کہ نیا سال دہشت گردی کے خاتمے کا سال ہوگا اور 2016ء میں دہشت گردی کو مکمل طور پر ختم کر دیا جائے گا۔ جنرل راحیل شریف نے گوادر، تلار اور تربت کا دورہ کیا۔ وزیراعلیٰ بلوچستان ثناء اللہ زہری ان کے ساتھ تھے۔ آرمی چیف نے اقتصادی راہداری کے حوالے سے تعمیراتی کام کابھی جائزہ لیا اور کارکنوں کو سیکیورٹی کی حوالے سے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔جنرل راحیل شریف نے تربت میں قبائلی عمائدین سے بھی بات کی اور اس امر پر اطمینان ظاہر کیا کہ امن و امان کے حوالے سے بلوچستان میں بھی بہتری آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ فوج نے اپنے ملک کی تعمیر و ترقی کے لئے امن قائم کرنے کی خاطر بہت قربانیاں دیں اور وہ وقت دور نہیں جب ملک امن کا گہوارہ ہوگا۔ انہوں نے برملا کہا انشاء اللہ 2016ء دہشت گردی کے مکمل خاتمے کا سال ہوگا۔جنرل راحیل شریف ایک سچے سپاہی اور بڑے مستعد کمانڈر ہیں ان کی سربراہی میں آپریشن ضرب عضب نے بہت زیادہ کامیابیاں سمیٹی ہیں اس مقصد کیلئے فوجی جوانوں نے جام شہادت نوش کیا۔ قبائلی عوام نے گھر بار چھوڑے۔ حکومتوں نے مکمل تعاون کیا اور اب دہشت گردوں کا نیٹ ورک بکھر چکا وہ پاکستان سے فرار ہو کر افغانستان کے پہاڑوں میں روپوش ہیں البتہ ملک میں ان کے نیٹ ورک کے بچے کھچے حصے باقی ہیں جو گاہے بگاہے معصوم زندگیوں سے کھیلنے کے لئے دھماکے کرتے رہتے ہیں۔آرمی چیف کا عزم اور بیان انتہائی حوصلہ افزا ہے خصوصاً بلوچستان میں بلوچ عمائدین کو ان کی یقین دہانی پرامن شہریوں اور قبائل کے لئے اطمینان اور تسلی کا باعث ہوگی۔ بلاشبہ دہشت گردی سے ملک کے اندر جانی اور مالی نقصان ہو رہا تھا، عدم تحفظ کا احساس بڑھ گیا تھا اور بیرونی دنیا میں بدنامی ہو رہی تھی۔ پاک فوج نے آپریشن ضرب عضب کے ذریعے خوف میں بہت حد تک کمی کر دی اب قوم فوجی اقدامات اور کامیابیوں سے مطمئن ہے۔ جنرل راحیل شریف نے اپنے لئے یہ سال اہم بنا لیا ہے جو اس حوالے سے بھی ہے کہ ان کی مدت بطور آرمی چیف اسی سال میں مکمل ہونے والی ہے۔ انہوں نے اپنی صلاحیت، پھرتی، مستعدی اور عزم سے عوام کا اعتماد جیتا ہے تو اقوام عالم میں بھی اُ ن کا وقار بلند ہوا ہے اور اُن کے لئے احترام کے جذبات میں اضافہ ہوا ہے انہوں نے یہ عزم ظاہر کیا تو یقیناًپورا بھی کریں گے۔ ہم بھی ان کی کامیابی کے لئے دعاگو ہیں۔

مزید : اداریہ