سرکاری ہسپتالوں کو قبلہ درست کرنے کیلئے 15روز کی ڈیڈ لائن

سرکاری ہسپتالوں کو قبلہ درست کرنے کیلئے 15روز کی ڈیڈ لائن

لاہور( جاوید اقبال) محکمہ صحت کے نئے سربراہ سیکرٹری صحت نے صوبائی دارلحکومت کے سرکاری ہسپتالوں کو ’’ قبلہ درست‘‘ کرنے کے لئے 15دن کی ڈیڈ لائن دیدی ہے جس پر عمل در آمد کے لئے ٹاسک سیکرٹری صحت نجم شاہ کو سونپ دیا گیا ہے۔انہوں نے یہ ایکشن ایڈیشنل چیف سیکرٹری خواجہ شمائل کے اچانک دورہ سروسز ہسپتال کے بعد لیا ہے۔چیف سیکرٹری خضر حیات گوندل نے لاہور کے تمام ٹیچنگ ہسپتالوں کے پرنسپل اور میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کو طلب کیا اسی دوران چیف سیکرٹری نے لاہور ٹیچنگ اور ڈسٹرکٹ ہسپتالوں کی کارکردگی پر شدید برہمی کا اظہار کیا اس موقع پر چیف سیکرٹری نے کہاکہ کتنے افسوس کا مقام ہے کہ پنجاب کے دل کہلانے والے شہر لاہورکے ٹیچنگ ہسپتالوں کے حالات انتہائی بد تر ہیں اور مریض دوست نہیں ہیں وینٹی لیٹرز خراب ہیں وارڈوں میں مریضوں کو مفت ادویات نہیں مل رہی ہیں ہسپتالوں کے درو دیوار کو سفیدی تک نہیں کی گئی صفائی کا نظام انتہائی خراب ہے گائنی وارڈوں کے حالات بھی کسمپرسی کا شکار ہیں مریضوں کی تذلیل کی جارہی ہے ہسپتال کی انتظامیہ نے خود کو اپنے دفاتر تک محدود کررکھا ہے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ چیف سیکرٹری نے سیکرٹری صحت کو ہدائت کی کہ وہ ہسپتالوں میں مانیٹرنگ کا نظام بہتر بنائیں جس پر سیکرٹری صحت نجم شاہ نے جنگی بنیادوں پر اقدامات شروع کردئیے ہیں ۔ذرائع نے بتایا ہے کہ سیکرٹری صحت نے شہر لاہور کے تمام ٹیچنگ اور ضلعی ہسپتالوں کے پرنسپلز اور ایم ایس صاحبان کو قبلہ درست کرنے کے لئے 15دن کی ڈیڈ لائن دیدی ہے جس میں ہسپتال کی انتظامیہ کو دس دن کے اندر اندر شکائت پر عمل درآمد کا کہا گیا ہے جس کے بعد 15جنوری سے سیکرٹری صحت یا ان کے نمائندے اچانک ہسپتالوں کا دورہ کریں گے اور جہاں بد انتظامی پائی گئی اس پر متعلقہ ہسپتال کے ایم ایس اور پرنسپل دونوں کے خلاف کاروائی کی جائے گی ۔اس حوالے سے سیکرٹری صحت نجم شاہ سے بات کی گئی تو انہوں نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ تمام ہسپتالوں کو 15دن کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے جس پر انہیں کہا گیا ہے کہ ایمرجنسی آؤٹ ڈور اور ان ڈور میں سینئر ڈاکٹروں کی دستیابی کو یقینی بنائیں وینٹی لیٹرز کو مرمت کرواکر چالو کیا جائے ڈبوں میں بند مشینری کو استعمال کیا جائے ایمرجنسی اور گائنی لیبرروم میں ادویات کی چوبیس گھنٹے دستیابی کو پورا کیا جائے ایمرجنسی میں ہر قسم کے ٹیسٹ کی مفت سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے صفائی کا نظام بہتر بنایا جائے سیکرٹری نے کہا کہ عمارت میں رنگ و روغن کے سسٹم کو بہتر بنایا جائے ایم ایس صاحبان اپنے دفاتر سے باہر نکل کر مریضوں سے ملاقاتیں کرکے ان کے مسائل حل کریں سیکرٹری صحت نے کہا کہ ہسپتال عوامی خدمت کے ادارے ہیں انتظامیہ ‘ ڈاکٹرز اور عملہ سمیت نرسز کو چاہئے کہ وہ مریضوں کے حقیقی طور پر خادم کا کردار ادا کریں اور جنت کمائیں ۔انہوں نے کہا کہ ہسپتالوں کو مریض دوست بنانے کے لئے وہ خود باہر نکلیں گے اور خفعیہ مانیٹرنگ اور چھاپوں کا سلسلہ شروع کیا جائے گا مریضوں کے لئے مسائل پیدا کرنے والی انتظامیہ کو سیٹوں کی بجائے گھروں کو جانا ہو گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1