حکومتی پالیسوں سے عوام کسمپرسی کی حالت میں زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں ‘ یوسف اعوان

حکومتی پالیسوں سے عوام کسمپرسی کی حالت میں زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں ‘ ...

لاہور(نمائندہ خصوصی ) پیپلز پارٹی علماء ونگ پنجاب کے صدر اور اسلامی نظریاتی کونسل کے رکن علامہ محمد یوسف اعوان نے کہا ہے کہ حکومتی پالیسوں کے باعث امیر ، امیر تر اور غریب ، غریب تر ہوتا چلا جا رہا ہے اور عوام کسمپرسی کی حالت میں زندگی بسر کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں ‘ کسی بھی ترقی یافتہ ملک اور اچھے معاشرے کی بنیادتعلیم ہے لیکن بدقسمتی سے ہمارے ملک میں اچھی تعلیم کا حصول صرف نجی تعلیمی اداروں تک محدود ہو کر رہ گیا ہے جن والدین کی مالی پوزیشن مستحکم ہوتی ہے ان کے بچوں کے لئے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کرنے کے مواقع میسر ہوتے ہیں لیکن عام اور غریب والدین کے بچے چونکہ سرکاری اداروں میں پڑھتے ہیں وہاں ان کے لیے اعلیٰ پوزیشن حاصل کرنا تو دور کی بات تعلیم حاصل کر نا بھی ایک خواب ہی ہوتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس طبقاتی نظام تعلیم نے ہمارے اداروں اور ناقص حکومتی پالیسیوں کا عمل دخل ہے ہر گلی اور محلہ میں بغیر منصوبہ بندی اور منظوری کے نجی یونیورسٹیاں ، کالجزاور سکولزقائم کر دئیے جاتے ہیں اور ان کی فیسوں کی وصولی کا کوئی ضابطہ اور قاعدہ مقرر نہیں ہوتا ملک میں کوئی ادارہ ایسا نہیں جو ان نجی تعلیمی اداروں کے فیس شیڈول کو کنٹرول کرے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس طرح ملک میں اشرافیہ کی حکمرانی ہے اسی طرح تعلیمی اداروں میں بھی کچھ خاندانوں نے ثابت کر دیا ہے کہ معیاری اور اعلیٰ تعلیم حاصل کرنا صرف اور صرف ان کے بچوں کا حق ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1