انسداد بد عنوانی کی موثر حکمت عملی کے مثبت نتائج سامنے آئے: چیئرمین نیب

انسداد بد عنوانی کی موثر حکمت عملی کے مثبت نتائج سامنے آئے: چیئرمین نیب

اسلام آباد (آئی این پی ) چیئرمین نیب قمر زمان چوہدری نے کہا ہے کہ گزشتہ سال لوٹے گئے 4.5ارب روپے خزانے میں جمع کروائے، نیب نے انسداد بدعنوانی کی موثر حکمت عملی تیار کی جس کے مثبت نتائج سامنے آئے ہیں اس حکمت عملی پر 2016ء میں بھی عمل جاری رہے گا، نیب نے مضاربہ سکینڈل میں 22 ارب روپے کے 12 ریفرنسز احتساب عدالتوں میں دائر کئے، رینٹل پاور پراجیکٹ کے مقدمات میں 9 ریفرنسز احتساب عدالتوں میں دائر کئے گئے ہیں، کرپشن ایک ناسور ہے جس سے نہ صرف قومی وسائل ہڑپ ہوتے ہیں بلکہ قومی ترقی کا عمل بھی متاثر ہوتا ہے۔ہفتہ کوایک بیان میں انھوں نے کہاکہ بدعنوانی کے خاتمے کیلئے جامع قومی انسداد بدعنوانی لائحہ عمل وضع کیا ہے نیب نے گزشتہ سال بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی 4.5بلین روپے کی رقم وصول کر کے قومی خزانے میں جمع کرائی ہے جبکہ نیب نے اپنے قیام سے لے کر اب تک بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی 265بلین روپے کی رقم وصول کر کے قومی خزانے میں جمع کرائی ہے، 2013ء کے مقابلے میں 2014ء میں نیب کو دگنا شکایات موصول ہوئی نیب کو 2014ء میں 40 ہزار 77 درخواستیں موصول ہوئیں جبکہ 2013ء میں 19900 درخواستیں موصول ہوئی تھیں۔ ان اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ 2013ء کے مقابلے میں 2014ء میں نیب کووگنا شکایات موصول ہوئیں۔ یہ لوگوں کا نیب پر اعتماد کا اظہار ہے۔ نیب نے 2014ء کے دوران 585 انکوائریاں، 188 انوسٹی گیشنز مکمل کیں جبکہ 2013ء کے دوران 243 انکوائریاں اور 129 انوسٹی گیشنز مکمل کی گئیں۔ اسی طرح 2014ء میں احتساب عدالتوں میں 208 مقدمات دائر کئے گئے جبکہ 2013ء میں 135 مقدمات دائر کئے گئے تھیلڈاٹ کی رپورٹ کے مطابق 42 فیصد لوگ نیب پر اعتماد کرتے ہیں جبکہ پولیس پر30 فیصد اور سرکاری افسران پر 29 فیصد لوگ اعتماد کرتے ہی۔ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی حالیہ رپورٹ کے مطابق کرپشن پرسیپشن انڈکس میں پاکستان 175 ویں نمبر سے 126 ویں نمبر پر آ گیا ہے اور پاٖکستان نے یہ پوزیشن نیب کی کوششوں سے حاصل کی ہے۔نیب نے نوجوانوں کو کرپشن کے برے اثرات سے آگاہ کرنے کیلئے ایچ ای سی کے ساتھ مفاہمت کی ایک یادداشت پر دستخط کئے ہیں۔ ملک بھر کی یونیورسٹیوں، کالجوں اور سکولوں میں نوجوانوں میں کرپشن کیخلاف آگاہی فراہم کرنے کیلئے نیب اور ایچ ای سی کے تعاون سے کردار سازی کی 10 ہزار سے زائد انجمنیں قائم کی گئی ہیں۔ نیب نے مضاربہ سکینڈل میں 22 ارب روپے کے 12 ریفرنسز احتساب عدالتوں میں دائر کئے ہیں۔ ملزمان سے اب تک املاک اور گاڑیوں کے علاوہ ایک ارب 73 کروڑ روپے وصول کئے گئے ہیں۔ اس مقدمہ میں نیب نے اب تک 33 ملزمان کو گرفتار کیا ہے، اسی طرح رینٹل پاور پراجیکٹ کے مقدمات میں 9 ریفرنسز احتساب عدالتوں میں دائر کئے گئے ہیں۔

مزید : صفحہ آخر