ایم پی ایز کے نام کی تختیاں اکھاڑنا جمہوری فعل نہیں ،جمشید مہمند

ایم پی ایز کے نام کی تختیاں اکھاڑنا جمہوری فعل نہیں ،جمشید مہمند

شیرگڑھ (نامہ نگار) ایم پی اے جمشید خان مہمند نے کہا ہے کہ پی کے 27اور پی کے 26میں ترقیاتی منصوبوں پر سے ایم پی ایز کے نام کی تختیاں اکھاڑے جانے کی روایت جمہوری فعل نہیں جمہوریت میں رواداری اور برداشت دو اہم عناصر ہیں جو جمہوریت کو پروان چڑھانے میں اہم کردار ادا کررہے ہیں میں نے اپنے ساتھی سختی سے ایم پی اے افتخار مشوانی کی تختیاں اکھاڑے جانے سے منع کئے ہیں تختیاں اکھاڑے جانے سے کوئی بڑا اور قدآور سیاست دان نہیں بن سکتا اگر میرے بھائی ایم پی اے کے میرے نام کی تختیاں اکھاڑے جانے سے تسلی ہوجاتی ہے تو میں اپنے نام کی تمام تختیاں اکھاڑ کر خود ان کے گھر کے سامنے رکھوں گاانہوں نے اپنے تمام ساتھیوں کو سختی سے منع کرتے ہوئے کہا کہ کسی کے نام کی تختیاں اکھاڑے جانے والے میرے ساتھی نہیں ہوسکتے میرا جو بھی ساتھی اس قبیح فعل میں ملوث پایا گیا تو وہ میرا ساتھی نہیں دشمن ہوگا ایم پی اے افتخار مشوانی کی تختیاں اکھاڑے جانے کے ساتھ میرا اور میرے گروپ کا کوئی تعلق نہیں خود بھی ترقیاتی منصوبوں پر اپنے نام کی تختیاں سجانے کا شوقین نہیں ہوں یہ عوام کے ٹیکسوں کی رقومات ہے جو عوام کے فلاح وبہبود پر خرچ ہورہے ہیں یہ ان پر کوئی احسان نہیں انہوں نے کہا کہ مجھے اپنے شہید بھائی کی یہ نصیحت تھی کہ ترقیاتی کام پر ناموں کی تختیاں سجاکر عوام کے دلوں میں جگہ پیدا نہیں کی جاسکتی ہے بلکہ اپنے کردار سے عوام کے دلوں میں اپنے لئے جگہ پیداکریں پس میں عوام کے دلوں میں موجود ہوں مجھے تختی پر نام سجا کر ترقیاتی منصوبوں پر لگانے کی کوئی ضرورت نہیں انہوں نے خبردار کیا کہ میری شرافت کوکوئی میری کمزوری نہ سمجھے میں جواب دینے کا انداز اور زبان بھی خوب طرح سے جانتا ہوں لیکن پھر سیاست سیاست نہیں دشمنی بن کر رہے گی انہوں نے کہا کہ افتخار مشوانی میرے لئے معزز اور محترم ہے اور رہے گا وہ بھی اپنے ساتھی سمجھائے

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر