اس نوجوان لڑکی نے جیب میں ایک روپیہ نہ ہونے کے باوجودمفت میں دنیا کی سیر کرلی ایسا طریقہ اپنایا کہ سن کر آپ کا چہرہ بھی شرم سے لال ہوجائے گا

اس نوجوان لڑکی نے جیب میں ایک روپیہ نہ ہونے کے باوجودمفت میں دنیا کی سیر کرلی ...
اس نوجوان لڑکی نے جیب میں ایک روپیہ نہ ہونے کے باوجودمفت میں دنیا کی سیر کرلی ایسا طریقہ اپنایا کہ سن کر آپ کا چہرہ بھی شرم سے لال ہوجائے گا

  

سڈنی(نیوزڈیسک) ہمیشہ ہی سے پیسوں کی کمی کا شکار رہنے والی نوجوان طالبہ کو اس سال امراءنے 50ہزار ڈالر(50لاکھ روپے) کی دنیا بھر کی سیر کروائی۔ آسٹریلوی شہر ایڈیلیڈ کی 21سالہ کیسندراجیکولین ہمیشہ ہی سے پیسوں کی کمی کا شکار رہی تھی اور ویٹریس کی نوکری کرنے کے بعد تو وہ اپنے شہر سے باہر جانے کا بھی نہیں سوچ سکتی تھی لیکن پھر اس نے ڈیتنگ سائٹ Miss Travelجوائن کی اور اس کادنیا بھر کا ٹور شروع ہوگیا۔وہ اب تک ویتنام، سنگاپور، تھائی لینڈ جاچکی ہے جبکہ جاپان کے اس نے پانچ وزٹ کئے ہیں۔ کچھ لوگوں نے اس پر شدید تنقید بھی کی ہے لیکن اس کا کہنا ہے کہ اس طرح گھومنے پھرنے میں کوئی مضائقہ نہیں۔

”گذشتہ ایک سال میں مجھے دنیا کے کئی ممالک دیکھنے کا موقع ملا اور ان پر اٹھنے والے اخراجات50ہزار ڈالرز تھے، عام حالات میں میں کبھی بھی ان جگہوں پرنہیں جاسکتی تھی۔کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ اخلاق باختہ کام ہے لیکن ایسا ہرگز نہیں کیونکہ میں بیرون ملک کسی سے بھی ملنے سے پہلے اچھ طرح اس کی چھان بین کرتی ہوں۔ دلچسپ بات ہے کہ آپ کے لئے نئے ملنے والے کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کرنا ہرگز ضروری نہیں۔“

جیکولین کا کہنا ہے کہ وہ ایسے اجنبی لوگوں سے بھی ملتی ہے جن کے ساتھ ملنے کا وہ سوچ بھی نہیں سکتی تھی ۔”جب میں نے پہلی بار ایسی سفری ڈیٹ کا سنا تو مجھے یقین نہ آیا کہ ایسا بھی ہوسکتا ہے۔میں اس وقت دن میںصرف10ڈالر یومیہ پر زندہ تھی اور باہر جانے کاسوچ بھی نہیں سکتی تھی۔“اس کا کہنا ہے کہ پہلی بار اپنے ہی شہر میں اسے ایک ایسے کاروباری کا علم ہواجو سنگاپور جارہا تھا اور اسے ساتھ کی ضرورت تھی لہذاوہ فوراًراضی ہوگئی۔ ”میں بزنس کلاس میں گئی اور ایک ایسے ہوٹل میں ٹھہری جس کاایک رات کا کرایہ950ڈالر تھا۔“اس کا کہنا تھا کہ اس وزٹ کے بعد اسے بارہا اس طرح کے مواقع ملے جس میں اسے دوسرے ممالک میں جانے کااتفاق ہوا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -