رحیم یار خان میں پیپلزپارٹی کا مینڈیٹ چوری کیا گیا،مخدوم احمد محمود

رحیم یار خان میں پیپلزپارٹی کا مینڈیٹ چوری کیا گیا،مخدوم احمد محمود

  

لاہور( نمائندہ خصوصی)پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب کے صدر مخدوم سید احمد محمود نے کہا ہے کہ رحیم یار خان میں پیپلزپارٹی کا مینڈیٹ چوری کیا گیا اور جمہوریت کی توہین کی گئی اس سے پنجابی اور سرائیکی تقسیم کو بڑھایا گیا۔ نفرت میں بھی اضافہ ہو گا۔ سرائیکیوں کے دل دکھے ہیں۔ پھر کہا جاتا ہے کہ بلوچستان کے حالات کیوں خراب ہیں۔ سندھ میں کیوں نفرت ہے اور بنگلہ دیش کیوں الگ ہوا ہے۔ مجھے اس سے کوئی فرق نہیں پڑے گا مگر اس کے اثرات اچھے نہیں ہوں گے۔۔ ضلع رحیم یار خان میں الیکشن کے دوران ووٹوں کی خریدوفروخت ہوئی اور 40کروڑ روپے لگا کر ہمارے 18ووٹ خریدے گئے اور ہر خریداری پر ایک سے تین کروڑ روپے خرچ کیے گئے۔ وہ ماڈل ٹاؤن میں اپنی رہائش گاہ پر الیکٹرانک میڈیا کے اینکرپرسن اور رپورٹرز سے غیررسمی گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے سینئر ایڈوائزر و پریس سیکرٹری بشیر ریاض، پارٹی کی فیڈرل کونسل کے رکن عبدالقادر شاہین، پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب کے سیکرٹری اطلاعات چودھری شوکت محمد بسرا اور میڈیا کوآرڈینیٹر محمد سلیم مغل بھی موجود تھے۔مخدوم احمد محمود نے کہا کہ پنجابی اور سرائیکی تقسیم اس لیے بھی گہری ہوئی ہے کہ ووٹوں کی خریدوفروخت کرنے والا مرکزی کردار پنجابی ہے اس سے جنوبی پنجاب میں احساس محرومی مزید بڑھے گا اور تخت لاہور کا تاثر مزید پختہ ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کے حکمرانوں کا جمہوری رویہ یہ ہے کہ ایک ضلع کی چیئرمین شپ بھی پیپلزپارٹی کو دینے پر تیار نہیں۔ دھاندلی کر کے ضلع کونسل کی چیئرمین شپ ہتھیائی گئی۔انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی اور پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرین کا الحاق ہو گا۔ بلاول بھٹو اور آصف علی زرداری ایک ہی انتخابی نشان تیر پر الیکشن لڑیں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -