بغداد میں کار بم دھماکہ ، 35افراد ہلاک ، 61زخمی ، فوجی بیرک پر حملے میں چار فوجی مارے گئے

بغداد میں کار بم دھماکہ ، 35افراد ہلاک ، 61زخمی ، فوجی بیرک پر حملے میں چار ...

  

بغداد(اے این این) عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایک مصروف چوک میں کار بم دھماکہ ہوا ہے جس سے کم از کم 35 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔شہر کے شیعہ علاقے صدر میں ہونے والے اس دھماکے میں کم از کم 61افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔ اس حملے کی ذمہ داری فی الحال کسی نے قبول نہیں کی ۔ گزشتہ روز ہونے والے اس حملے کا نشانہ بظاہر وہ مزدور ہیں جو صدر کے علاقے میں کام کا انتظار کر رہے تھے۔اس حملے میں تین پولیس اہلکار بھی مارے گئے ہیں۔یہ حملہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب فرانسیسی صدر فرانسوا اولاند بغداد کے قریب عراق کی انسدادِ دہشت گردی کی اکیڈمی کا دورہ کرنے والے تھے۔فرانسوا اولاند نے عراق میں تعینات فرانسیسی فوجیوں کو بتایا کہ وہ یہاں دولتِ اسلامیہ سے لڑ کر فرانس کو حملوں سے بچا رہے ہیں۔انھوں نے وہاں تعینات فرانسیسی فوجیوں کو بتایا کہ وہ یہاں دولتِ اسلامیہ سے لڑ کر فرانس کو حملوں سے بچا رہے ہیں۔بعد ازاں اولاند کردستان کے علاقے میں جا کر دولتِ اسلامیہ سے برسرِ پیکار فرانسیسی اہلکاروں سے ملاقات کریں گے جو عراقی سرکاری فوجی کی تربیت کر رہے ہیں۔پیر ہی کو دولتِ اسلامیہ کے جنگجوں نے بیجی شہر کے قریب فوجی بیرک پر حملہ کیا، جس میں خبررساں ادارے رائٹرزکے مطابق چار فوجی ہلاک ہو گئے۔

بغداد/حملے

مزید :

صفحہ اول -