خیبر ایجنسی ، سابق ممبر ایجنسی کونسل اور انکے بیٹوں کے شناختی کارڈ

خیبر ایجنسی ، سابق ممبر ایجنسی کونسل اور انکے بیٹوں کے شناختی کارڈ

  

 بلاک باڑہ (نامہ نگار)سابق ممبر ایجنسی کونسل حاجی اختیار شا ہ آفریدی اور ان کے پانچ بیٹوں کی قومی شناختی کارڈز بلاک کر کے ان کی شہریت کو مشکوک بنا دیاگیا ۔نادرا کی جانب سے ان کے ساتھ پیش ہونے والے واقع کو حاجی اختیار شاہ آفریدی نے میڈیا کے سامنے بیان کرتے ہوئے کہا کہ باڑہ اپریشن کی وجہ سے ہم نے نقل مکانی کر کے محفوظ مقام نوشہرہ میں اپنے بچوں کے لئے اپنی ملکیتی زمین پر گھر تعمیر کیا اور وہاں گزشتہ کئی سالوں سے ایک پاکستانی شہری کی حیثیت سے رہائش پذیر ہوں لیکن نوشہرہ پولیس اور نادرا کے گٹھ جوڑ سے مجھے بلیک میل کیا گیا اور میری شہریت کو جان بوجھ کر تبدیل کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ روزانہ نادرا آفس کا چکر ان کا معمول بن گیا ہے انہوں نے کہا کہ پاکستان بننے سے قبل ہمارے آبا واجداد نے اس مملکت خداداد کی آزادی میں بے پناہ قربانیاں پیش کی ہے اور ان کے والد نے 1965اور 1971کی جنگ میں سپاہی کی حیثیت سے جنگ لڑی ہے اس کے باوجود بھی نادرا نے مجھے افغانی ظاہر کر کے مجھے بہت بڑا نقصان پہنچایا جس کا ہرجانہ نادرا ادا کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ نادرا اہلکاربینک بیلنس بنانے کے لئے پاکستانی شہری کو افغانی اور افغانی شہری کو منٹوں پاکستانی شہریت دے سکتا ہے اوراب بھی سیکڑوں کی تعداد میں ایسے افغانی لوگ فاٹا میں موجود ہے جو رشوت دے کر پاکستانی شناختی کارڈ بنا چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نادرا کے نا اہل سٹاف نے ہماری عزت اور غیرت کو للکارا ہے کیونکہ اس ملک کے محب وطن شہریوں کی شہریت تبدیل کرنا ہتھک عزت سے کم نہیں ۔اور انہوں نے کہا کہ اگر نادرا حکام نے ملوث نادرا اہلکاروں کے خلاف کاروائی نہیں کی تو ہم عنقریب نادارا کے خلاف ہتھک عزت کا مقدمہ بھی لڑیں گے۔

مزید :

علاقائی -