کوہاٹ ،شاپ کیپر ز یونین کا چھاپوں اور جرمانوں کیخلاف مظاہرہ

کوہاٹ ،شاپ کیپر ز یونین کا چھاپوں اور جرمانوں کیخلاف مظاہرہ

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) کوھاٹ بازار مصطفی شاپ کیپرز یونین کا اے اے سی کے آئے روز چھاپوں اور جرمانوں پر احتجاجی مظاہرہ‘ ظالمانہ سلوک بند کرنے اور متعلقہ اے سی کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ‘ یونین صدر کی اجازت کے بغیر بازار داخل ہونے پر دکانیں بند کرنے اور انتظامیہ سے ہر قسم کا تعاون ختم کرنے کا فیصلہ‘ تفصیلات کے مطابق بازار مصطفی شاپ کیپرز یونین کے صدر حاجی امجد پراچہ کے ہدیت پر اے سی اقرار علی شاہ کے مذکورہ بازار میں آئے روز چھاپوں اور ناجائز جرمانوں کے خلاف دکانداران نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور بعد ازاں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر حاجی امجد پراچہ‘ جنرل سیکرٹری یاور محمد یاور اور نائب صدر دلاور خان نے کہا کہ اے اے سی اقرار علی شاہ نے بازار کے دکانداروں کو ناجائز تنگ کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہے اور ہزارون روپے جرمانہ انہوں نے وطیرہ بنا لیا ہے چونکہ دکاندار شریف اور مظلوم طبقہ ہوتا ہے لہٰذا اے سی نے ان کی توہین اور بے عزتی کا کوئی موقعہ ہاتھ سے نہیں جانے دیتا اور باریش دکانداروں کو گاڑی میں بٹھا کر کچری لے جایا جاتا ہے وہاں 20 ہزار سے 50 ہزار جرمانے یا جیل جانے کی تڑیاں دیتا ہے حالانکہ ہم محرم یا دیگر مواقع پر انتظامیہ سے مکمل تعاون کرتے ہیں اور باقاعدگی سے ٹیکس دیتے ہیں مگر اس کے باوجود ہمارے ساتھ سوتیلی ماں کا سلوک روا رکھا جا رہا ہے جو سراسر زیادتیے اور ناانصافی ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ اے اے سی اقرار علی شاہ کے خلاف کاررائی کی جائے انہیں ناجائز جرمانوں سے باز رکھا جائے ورنہ وہ انتظامیہ سے ہر قسم کا تعاون ختم کرنے پر مجبور ہوں گے انہوں نے مزید کہا کہ انتظامیہ تاجر برادری کے اجلاسوں میں بازار مصطفی یونین کو نظر انداز کرتی ہے اس پر بھی نظرثانی کی جائے انہوں نے متفقہ طور پر فیصلہ کیا کہ میونسپل کمیٹی کے اہلکار‘ محکمہ خوراک کا عملہ یا اے اے سی کا عملہ بازار میں چیکنگ کے لیے آئے تو اسے صدر حاجی امجد پراچہ سے دو دن پہلے اجازت لینی ہو گی اچانک چھاپہ پر انتظامیہ کے خلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال ہو گی انہوں نے میونسپل کمیٹی سے بھی مطالبہ کیا کہ بازار مصطفی میں پڑے گندگی کے ڈھیر روزانہ صاف کیے جائیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -