میٹرو بس کی چوڑائی کم ٹیکنیکل ایڈوائرز نے ’’پاکستان ‘‘ کی خبر کی تصدیق کر دی

میٹرو بس کی چوڑائی کم ٹیکنیکل ایڈوائرز نے ’’پاکستان ‘‘ کی خبر کی تصدیق کر ...

  

 ملتان ( نمائندہ خصوصی ) ٹیکنیکل ایڈوائزر ملتان میٹرو بس پروجیکٹ نے ٹریک کی چوڑائی کم ہونے سے متعلق روزنامہ ’’پاکستان ‘‘ کی خبر کی تصدیق کردی ہے اور ایک ہینڈ آؤٹ میں تسلیم کیا ہے فلائی اوور یا ایلی وٹیڈ اور زمینی ٹریک کی چوڑائی 9 میٹر یا 29.6 فٹ ہے ‘ ان کا یہ بیان 30 اکتوبر 2016 کو ڈائریکٹر تعلقات عامہ ملتان ڈویژن کی جانب سے جاری کردہ ہینڈ آؤٹ نمبر 864 میں سامنے آیا ہے اور اس وقت انہوں نے اپنے اس بیان میں روزنامہ ’’پاکستان ‘‘ کی خبر کو مسترد کرتے ہوئے قرار دیا کہ ملتان میٹرو بس پروجیکٹ کی چوڑائی دونوں بسوں کیلئے کافی ہے اور مخالف سمت سے آنیوالی بسیں ایک دوسرے کو کراس کر سکتی ہیں اس ہینڈ آؤٹ میں وہ ٹریک کی چوڑائی کے حوالے سے اصل بات گول کرگئے کیونکہ ٹینڈر دستاویزات کے مطابق ملتان میٹرو بس پروجیکٹ کے ٹریک کی چوڑائی 10 میٹر مقرر کی گئی ‘ جبکہ اب موقع پر یہ چوڑائی صرف 9 میٹر تک کیوں محدود رکھی گئی ‘ اور کن عناصر کے مفادات کا تحفظ کیا گیا ۔ اس سوال کا جواب نہ تو 31 اکتوبر 2016 کے ہینڈ آؤٹ میں دیا گیا اور نہ ہی میٹرو بس پروجیکٹ کی انتظامیہ کی جانب سے اب تک سامنے آیا ہے حالانکہ سکیورٹی کے حوالے مشتہر کردہ ٹینڈر دستاویزات کے صفحہ نمبر 9/69پرمیٹرو بس پراجیکٹ ملتان کی خصوصیات بیان کرتے ہوئے واضح کیا گیا ہے اس ٹریک کی چوڑائی 10 میٹر ہے ملتان میٹرو بس پروجیکٹ کی ٹیم کے ایک اہم رکن نے نام نہ بتانے کی شرط پر بتایا کہ اس میں کرپشن کے عنصر کا کوئی عمل دخل نہیں لیکن بدترین ٹیکنیکل بلنڈر ہے ‘ انہوں نے کہا انجینئرز اور سپروائزری ٹیم کو اس کی ذمہ داری قبول کرنی چاہیے ۔ دوسری طرف گزشتہ روز کارپوریشن اور ضلع کونسل کے اجلاس کے موقع پر اس ایشو پر چہ مگوئیاں دیکھنے میں آئیں ‘ جبکہ سوشل میڈیا پر بھی شہری اس پروجیکٹ کی شفافیت کے حوالے سے سوالات کرتے نظر آئے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -