وزیر اعلٰی پرویز خٹک کا دورہ چین مکمل طور پر ناکام ثابت ہوا: حیدر ہوتی

وزیر اعلٰی پرویز خٹک کا دورہ چین مکمل طور پر ناکام ثابت ہوا: حیدر ہوتی

  

 نوشہرہ(بیورورپورٹ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر و سابق وزیر اعلیٰ امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ پرویزخٹک کا دورہ چین مکمل طور پر نا کام دورہ تھا اس دورے کے دوران بھی پرویز خٹک نے صوبہ خیبر پختونخوا کیلئے سی پیک میں کوئی خاطر خواہ منصوبہ نہیں دیا اور نہ اس نے خیبر پختونخوا کے وہ علاقے زیر بحث لائے جو اس اہم اور بین الااقوامی منصوبے میں نظر انداز ہوچکے تھے پرویز خٹک کا دورہ چین کا مثال وہی رہا کہ پرانا امام اور پرانے تراویح قوم میں وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کے دورہ چین سے مایوسی پھیل گئی ہے پی ٹی آئی صوبے کے عوام کی مایوسی دور کرنے کیلئے اب دکھاوئے کے دورے کر کے انتخابات کی طرح عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کر رہی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں ممتاز قانون دان اور نوشہرہ ڈسڑکٹ بار کے سابق صدر واجد علی ایڈووکیٹ ، مالاکنڈ یونیورسٹی کے چانسلر جوہر علی ، جج محمد یونس خان کے ماموں گل باچہ کی وفات پر تعزیت کے بعد میڈیا کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر عوامی نیشنل پارٹی تحصیل نوشہرہ کے جنرل سیکرٹری انجینئر حامد علی خان ، سینئر نائب صدر عبدالصمد خان ، سیکرٹری کھیل و ثقافت ملک عامر سرور ، فقیر گل عامر ، اور راظیم خان بھی موجود تھے امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ صوبائی حکومت کی نااہلی اور ناکامی کی وجہ سے بیرونی مالیاتی ادارے ، بین الااقوامی غیر سرکاری تنظیمیں اور سرمایہ کار خیبر پختونخوا کا رخ نہیں کررہے ہیں یہاں تک کہ صوبہ مالی ، انتظامی ،اور سیاسی بحران کا شکار ہوگیا ہے اور صوبے کے کسی سیکٹر میں بیرونی اداروں نے دلچسپی کا اظہار نہیں کیا ہے بیرونی مالیاتی اداروں کا صوبے میں عدم دلچسپی عمران خان اور وزیر اعلیٰ پرویز خٹک سمیت صوبائی حکومت پر عدم اعتماد کا اظہار ہے جو کہ اس صوبے کے عوام اور عمران خان سمیت پوری پختون قوم کے لئے باعث افسوس ہے انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعلیٰ پرویز خٹک چین جاکر اقتصادی راہداری ہی بھول گئے اور سی پیک کے حوالے سے اپنا موقف ہی بدل ڈالا کیونکہ عمران خان پنجاب کو خوش کرنا چاہتا ہے اور پرویز خٹک عمران خان کو عمران خان کو کیبر پختونخوا کے مسائل کے حل میں کوئی دلچسپی نہیں ہے ان پر وزارت اعظمیٰ کا بھوت سوار ہو چکا ہے اور وہ اس کے لئے کچھ بھی کرنے کو تیار ہے ۔

بٹ خیلہ(بیورورپورٹ)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدرسابق وزیراعلیٰ امیرحیدرخان ہوتی ہے کہ جب تک پختونوں کوسی پیک منصوبے میں اپناحق نہیں دیاگیا اس وقت تک ہم چھین سے نہیں بیٹھیں گے اوراپنے حقوق کے حصول کیلئے اخری حدتک جائیں گے ۔اپنے بیوی کوکنٹرول نہ کرنے والے تحریک انصاف کے چئیرمین عمران نیازی ملک کیسے کنٹرول کریں گے عوام اپنے حقوق کے حصول کیلئے عوامی نیشنل پارٹی کے جھنڈے تلے متحد ہوجائیں کیونکہ تبدیلی صرف اورصرف عوامی نیشنل پارٹی لائیگی صوبے میں امن امان کی بحالی میں مالاکنڈ ڈویژن کے عوام نے قربانیاں دی ہے۔ ان خیالات کااظہارعوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدرامیرحیدرخان ہوتی نے گزشتہ روز سخاکوٹ میں پارٹی کے ورکرزکنونشن کے موقع پرایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف کے دورحکومت میں پختونوں کی رسوائی ہوئی اوراپنے حقوق سے محروم ہوگئے ہیں ہمارے دورحکومت سے پہلے مالاکنڈڈویژن میں شدت پسندوں نے اپنی عدالتیں قائم کرکے پاکستان کے پرچم بھی اتاراگیاتھاہم اقتدارسنبھال کرکے مالاکنڈڈویژن کے عوام کودوبارہ اپنے پاؤں پرکھڑاکرکے پاکستان کے پرچم دوبارہ لہرادیاگیاجوآج بھی قائم ہے اورمالاکنڈڈویژن کے عوام کے بچوں کے جوسکول تباہ ہوئے تھے ان کی ایک سکول کی بجائے دوبہترین سکول تعمیرکی گئی انہوں نے کہاکہ ہم نے اپنے دورحکومت میں نویونیورسٹیاں قائم اورسینکڑوں سکول تعمیرکی گئی ہے ۔انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت سوات ایکپسریس وے کے ایک منصوبے کیلئے ملازمین کے جی پی فنڈزکے رقم خزانے سے نکال رہی ہے جوان کیلئے انتہائی شرم کی بات ہے ۔انہوں نے کہاکہ صوبے کے خزانہ خالی ہونے کی وجہ سے پی ٹی آئی کے ممبران اسمبلی پشاورکی ترقی کیلئے بازاروں میں کچکول اٹھاکے بھیک مانگنے پرمجبورہیں۔انہوں نے کہاکہ ہم نے اپنے دورحکومت میں پختونوں کوان کے شناخت دیکراسلام آباد سے پختونوں کاحق حاصل کرکے پختونخواپرخرچ کردیاہے اورایک روپے قرضہ نہیں لیاگیاہے ۔انہوں نے کہاکہ عمران نیازی کوحکومت پختونخواکے عوام نے دی ہے مگرانہوں نے پختونوں کوبے یارمددگارچھوڑکرکے پنجابیوں کے گودمیں بیٹھ کرتخت اسلام آباد کے حصول کیلئے جنگ لڑرہے ہیں۔صوبے میں امن امان کے قیام میں سب سے زیادہ قربانیاں مالاکنڈڈویژن کی عوام نے دی ہے ان کی قربانیوں کی بدولت آج صوبے میں امن امان قائم ہے۔

بخشالی ( نمائندہ پاکستان) پرویزخٹک کی مجبوری ہے کہ انکا لیڈر عمران خان پنجاب کو ناراض نہیں کرسکتا ، پرویز خٹک نے چین کا دورہ کرکے سی پیک پر خاموشی اختیار کرنے کیلئے راہ ہموار کی، پرویز خٹک سی پیک پر خاموشی اختیار کرسکتے ہیں لیکن ہم کسی صورت سی پیک کے معاملے پر خاموش نہیں رہیں گے، ان خیالات کا اظہار سابق وزیراعلیٰ امیر حیدر ہوتی نے پی کے تیس کوٹ دولت زئی مردان میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا، ان کا کہنا تھا کہ پرویز خٹک چین جانے سے پہلے ایک بات کررہے تھے وہاں پہنچ کر دوسری بات کرنے لگے، چین سے واپسی پر انہوں نے بیان دیا کہ گلگت سے حویلیاں تک سڑک کی تعمیر کی جائے گی ، یہ سڑک تو پہلے ہی بنی ہوئی ہے، پرویز خٹک کو مطالبہ کرنا چاہئے تھا کہ حسن ابدال سے لاہور جانے والی موٹروے کی طرز کی موٹروے پشاور سے ڈی آئی خان اور باجوڑ سے وزیرستان تک موٹروے تعمیر کی جائے ، اسی طرح باشا ڈیم بھی باشا ڈیم بہت پہلے کا منظور ہو چکا ہے اور پرویز خٹک اب اعلانات کررہے ہیں، ان کا مزید کہنا تھا کہ تحریک انصاف کو حکومت پختونوں نے دی لیکن وہ پختونوں کے مسائل کو بھول کرتمام توجہ پنجاب کی سیاست پر ہے، صوبے میں کوئی نیا منصوبہ شروع کرنا تو دور کی بات ہمارے دور کے منصوبوں پر بھی کام التواء کا شکار ہیں، انہوں نے پرویز خٹک کو مخاطب کرکے کہا کہ آپ کو عوام نے دوسری پارٹیوں اور حکومتوں پر تنقید کیلئے ووٹ نہیں دیا بلکہ عوام کے مسائل حل کرنے کیلئے ووٹ دیا ہے، جلسہ عام سے ضلعی ناظم حمایت اللہ مایار و دیگر نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -