علی سدپارہ کاماؤنٹ ایورسٹ مصنوعی آکسیجن سلنڈر کے بغیر سر کرنے کا آغاز

علی سدپارہ کاماؤنٹ ایورسٹ مصنوعی آکسیجن سلنڈر کے بغیر سر کرنے کا آغاز

اسکردو ( آن لائن )پاکستان سے تعلق رکھنے والے علی سدپارہ نے دنیا کی خطرناک اور بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ کو مصنوعی آکسیجن سلینڈر کے بغیر سر کرنے کا آغاز کردیا۔ان کے ہمراہ 35 سالہ ہسپانوی کوہ پیما ایلکس ٹکسی کون اور چھ نیپالی گائیڈ موجود ہیں۔اسکردو کے رہائشی 41 سالہ علی سدپارہ نے امید ظاہر کی ہے کہ وہ اپنی ٹیم کے ہمراہ موسم سرما میں مصنوعی آکسیجن کے بغیر کوہ پیما کرنے میں کامیاب ہوں گے۔ علی سدپارہ نے کہا ہے کہ ‘وہ بہت پرامید ہیں کہ موسم سرما میں دنیا کی بلند ترین اور خطرناک چوٹی پر پاکستان کا جھنڈا لہر کر دنیا کا واحد کوہ پیما ہونے کا اعزاز حاصل کر سکیں گے’۔انہوں نے کہا کہ نانگا پربت کو کامیابی سے سر کرنے کے بعد ان کی ٹیم کو گلگت بلتستان کے وزیراعلیٰ حفیظ الرحمٰن نے مدعو کیا تھا اور ماؤنٹ ایورسٹ کو سر کرنے کے تمام اخراجات دینے کا وعدہ کیا تھا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی