پیپلز پارٹی نے سندھ کو کھنڈر، تعلیمی نظام تباہ کر دیا:مصطفی کمال

پیپلز پارٹی نے سندھ کو کھنڈر، تعلیمی نظام تباہ کر دیا:مصطفی کمال

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی (این این آئی)پاک سر زمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے سندھ میں تعلیمی نظام کی ابتر صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کر تے ہوئے کہاہے پیپلزپارٹی کی حکومت نے عوام سے تعلیم چھین کر انہیں مزید جہالت کے اندھیرے میں دھکیل دیا ہے اور انہیں اپنا ذ ہنی غلام بنانا چاہتی ہے۔اپنے ایک بیان انہوں نے کہاپیپلزپارٹی سندھ میں دس سال لگاتار حکومت کررہی ہے اور دسویں سال کے آخری مہینوں میں چیف منسٹر صاحب کو یہ احسا س ہورہاہے کہ تعلیم کی گرتی ہوئی صورتحال پر کمیٹی بنائی جائے لیکن اس دوران جو بچے پہلی جماعت میں تھے وہ دسویں جماعت ان سکولوں سے پاس کرچکے ہیں جہاں پر تعلیم کی بنیادی سہولیات کا شدید فقدان ہے،یہ بچے ایک ایسے معاشی نظام کا حصہ بنے جارہے ہیں جو نا ہر پہلو سے پسماندہ ہے ،یہی وجہ تھی کہ میں نے چیف آٖف آرمی سے مطالبہ کیا تھا جہاں وہ آپریشن کر ر ہے ہیں وہاں ترقیاتی کاموں میں بھی اپناحصہ ڈالیں ۔ دس سال سے حکمران جماعت پیپلز پارٹی نے صوبے کو کھنڈر میں تبدیل کرنے سمیت شعبہ تعلیم کا بھی بیڑہ غرق کردیا ہے ۔ تعلیم ایک ایسالازوال خزانہ ہے جو قوموں کو پستی سے اُٹھا کر بلندیوں تک لے جاتا ہے، یہ ترقی کا واحدذریعہ ہے مگر تعلیمی نظام کو تباہ کرکے حکمرانوں نے ملک کی معیشت کیساتھ ظلم کیا ہے،جبکہ ایک کامیاب معاشرے کی تشکیل اور قومی سلامتی کیلئے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ دینی اور عصری دونوں علوم ناگزیر ہیں۔وفاقی حکومت پاکستان بلخصوص سندھ میں تعلیمی ایمرجنسی نافذ کر کے ملک کے معماروں کا مستقبل تباہی سے بچائے ۔

مزید :

علاقائی -