ناقص دودھ پر موت کی سزا مقرر کرنے کی درخواست مسترد

ناقص دودھ پر موت کی سزا مقرر کرنے کی درخواست مسترد

لاہور(نامہ نگار خصوصی)ناقص دودھ کی فروخت کرنے والوں کے لئے موت کی سزا مقرر کرنے کے لئے دائر درخواست پر لاہور ہائیکورٹ کے رجسٹرار آفس نے اعتراض عائد کرتے ہوئے درخواست واپس کر دی۔یہ درخواست عوام دوست پارٹی کے سربراہ انجینئر سید محمد الیاس کی جانب سے دائر کی گئی تھی، درخواست میں کہا گیا تھا کہ پنجاب کے تمام شہروں میں ملاوٹ شدہ دودھ کی سرعام فروخت اور سپلائی کا سلسلہ جاری ہے،نرم قوانین کی وجہ سے ملاوٹ مافیا قانون کی گرفت میں نہیں آتا،ہر سال ہزاروں کم سن بچے ملاوٹ شدہ اور ناقص دودھ کی وجہ سے ہلاک ہوجاتے ہیں ،ناقص دودھ پینے کی وجہ سے شہری مختلف بیماریوں کا شکار اور غذائیت کمی کا سامنا کر رہے ہیں، دینا بھر میں سخت قوانین کی وجہ سے ملاوٹ شدہ دودھ کی فروخت پر کڑی سزائیں ہیں، درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ عدالت قوانین میں ترمیم کر کے ملاوٹ شدہ اور مضر صحت دودھ کی فروخت پر موت کی سزا مقرر کرنے کا حکم دیا جائے تاہم رجسٹرار آفس نے اعتراض عائد کرتے ہوئے کہا کہ درخواست محض اخباری تراشوں کو بنیاد بناکر دائر کی گئی ہے اس لئے قابل سماعت نہیں ہے۔

مزید : صفحہ آخر