ٹرمپ کے پاکستان مخالف بیان کی مذمت کرتے ہیں،لاہور ہائی کورٹ بار

ٹرمپ کے پاکستان مخالف بیان کی مذمت کرتے ہیں،لاہور ہائی کورٹ بار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہورہائیکورٹ بار کی ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان مخالف حالیہ بیان کی شدید مذمت کرتے ہوئے امریکی صدر سے معافی کا مطالہ کردیا جبکہ ارباب اختیار سے مطالبہ کیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے حالیہ بیان پر فوری ردعمل کااظہار کرتے ہوئے مناسب اقدامات کئے جائیں۔لاہور ہائی کورٹ بار کے صدرچودھری ذوالفقار علی ،نائب صدردراشد جاوید لودھی ،سیکرٹری عامر سعید راں اورفنانس سیکرٹری محمد ظہیر بٹ نے اپنے مشترکہ بیان میں امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ کے ان الزامات کو انتہائی لغو اور بیہودہ قرار دیا جس میں صدر ٹرمپ نے پاکستان کو جھوٹا ، دھوکے باز کہا ۔علاوہ ازیں امریکی صدر کا یہ بیان کہ پچھلے 15 سالوں کے دوران پاکستان کو 36 کھرب روپے دیئے گئے۔عہدیداران لاہور ہائیکورٹ بارایسوی ایشن نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی افواج اور سول سوسائٹی نے ہزاروں جانیں قربان کیں اور اس جنگ میں پاکستان کی معیشت کو ناقابلِ تلافی نقصان اٹھانے کے علاوہ عوام کو خوشحالی جیسی دولت سے بھی ہاتھ دھونے پڑے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ نیو ورلڈآرڈر کی تکمیل کی خاطر پرامن اور تیل کی دولت سے مالا مال اسلامی ممالک کو زیرنگوں کرنے اور ان کے وسائل پر قبضہ کرنے کی خاطر نام نہاد دہشت گردی کا بہانہ بنا کر فوج کشی کر کے وہاں کے خوشحال عوام کو دو وقت کی روٹی سے محروم کر دیا اور لاکھوں افراد کو لقمہ اجل بنایا۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کے لاکھوں تاریک وطن کو پاکستان اپنے دستیاب وسائل سے پناہ دے رکھی ہے جس کی وجہ سے دہشت گردوں کے سہولت کاروں پر قابو پانے میں ملک کو دشواریوں کا سامنا ہے تاہم ہماری بہادر افواج نے دہشت گردی پر کافی حد تک قابو پالیا ہے اور وطن عزیز خوشحالی کے سفر پر گامزن ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ اپنے بہودہ الزامات پر پاکستان سے معافی مانگے اور ارباب اقتدار سے مطالبہ کیا کہ ڈونلڈٹرمپ کے بیان پر فوری ردعمل اور مناسب کاروائی عمل میں لائیں۔

مزید :

صفحہ آخر -