مائیکرو چپ لگے جدید اور محفوظ ترین ای پاسپورٹس کے اجرا کی تیاریاں مکمل، مارچ سے جاری ہونگے

مائیکرو چپ لگے جدید اور محفوظ ترین ای پاسپورٹس کے اجرا کی تیاریاں مکمل، مارچ ...

کراچی(این این آئی)جعلسازی سے مکمل محفوظ ای پاسپورٹس کے اجرا کی تیاریاں مکمل کرلی گئیں، پہلے مرحلے میں سرکاری افسروں اور سفارتکاروں کو ای پاسپورٹ جاری کئے جائیں گے۔تفصیلات کے مطابق ای پاسپورٹس کو جعلسازی سے مکمل محفوظ رکھنے کیلئے مائیکرو چپ لگائی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق بلیو اورریڈ پاسپورٹس کے اجرا کا آغاز مارچ 2018ء سے ہو گا جبکہ عام شہریوں کو ای پاسپورٹس کا اجرا دوسرے مرحلے میں کیا جائے گا۔سکیورٹی پرنٹنگ پریس سے بائیو میٹرک پاسپورٹس کی پہلی کھیپ اسلام آباد روانہ کردی گئی ہے، پہلے مرحلے میں 500آزمائشی ای پاسپورٹس جاری کئے جائیں گے۔ذرائع نے بتایاکہ ای پاسپورٹس میں نئے محفوظ ترین سکیورٹی فیچرز شامل کیے گئے ہیں، سکیورٹی فیچرز میں کاربوریٹڈ صفحات، ایک عام فوٹو اور ایک ڈاٹیڈ فوٹو بھی شامل ہے۔کاربوریٹڈ صفحات سے پاسپورٹس میں کسی بھی قسم کی جعلسازی ناممکن ہو گی، بائیو میٹرک پاسپورٹ پر لگی مائیکرو چپ میں پاسپورٹ ہولڈر کے تمام کوائف درج ہوں گے۔دس سالہ ای پاسپورٹ کی فیس جاری کردہ عام پاسپورٹ کے برابر ہوگی، مخصوص مدت کے بعد موجودہ کمپیوٹرائزڈ پاسپورٹس مکمل طور پر ختم ہو جائیں گے۔واضح رہے کہ کزشتہ ماہ کے وسط میں وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہاتھا کہ شہریوں کو نئے سال 2018ء کے وسط میں ای پاسپورٹ کا اجرا کردیا جائے گا جس میں مائیکرو چپ لگی ہو گی، اس جدید پاسپورٹ کے اجرا سے جعلی کاغذات کے ذریعے بیرون ملک سفر کرنے والوں کا قلع قمع کیا جا سکے گا۔

مزید : صفحہ آخر