فاٹا سیکرٹریٹ کی جانب سے شاہد آفریدی سپورٹس کمپلیس باڑہ کیلئے 23کروڑ 60لاکھ کا فنڈ ز جاری

فاٹا سیکرٹریٹ کی جانب سے شاہد آفریدی سپورٹس کمپلیس باڑہ کیلئے 23کروڑ 60لاکھ ...

باڑہ( حسین آفریدی سے ) فاٹا سیکرٹریٹ نے شاہد آفریدی سپورٹس کمپلیکس تحصیل باڑہ کے لیے 23 کروڑ000000 6 لاکھ روپے جاری کرچکے ہے ڈائریکٹر سپورٹس فاٹالیکن زمین مالکان کو ایک پائی کی ادائیگی نہیں کی گئی رقم پولیٹیکل ایجنٹ خیبرایجنسی نے روک لی ہے سہیل خان آفریدی سابق امیدوار این اے 46 ۔زمین میں تنازعہ ہے جب تک تنازعہ حل نہیں کسی کو پیسے نہیں دیں گے پولیٹیکل ایجنٹ خیبرایجنسی کپیٹن (ر)خالد محمود کا موقف ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال سابقہ آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے اپریشن ضرب عضب کے بعد دوسری ایجنسیوں کی طرح تحصیل باڑہ کے نوجوانوں کے لئے شاہد آفریدی سپورٹس کمپلیکس سٹیڈیم کا افتتاح کیا ۔افتتاح سے پہلے سٹیڈیم کی زمین کے لئے پولیٹیکل انتظامیہ اورقبیلہ اکا خیل مداخیل کے درمیان472 کنال پر مشتمل زمین کا معاہدہ ہوا۔پاکستان کرکٹ کے سٹار شاہد افریدی کے نام سے منسوب باڑہ تحصیل میں سپورٹ کپلیکس تنازعات کا شکار 472 کنال اراضی پر بننے والے باڑہ تحصیل کے علاقہ اکاخیل میں سپورٹس کمپلیکس پر پاکستان ارمی کے زیر نگرانی کام جاری ہے لیکن زمین کے مالکان کو رقم نہ ملنے پر عوام میں سخت تشویش پائی جاتی ہے روزنامہ پاکستان سروے میں قبیلہ اکاخیل کے مشران چیف ملک ظاہر شاہ آفریدی،حاجی سہیل خان آفریدی ،حاجی مینہ گل آفریدی،حاجی مخترم خان ، حاجی مواس خان آفریدی ،اور حاجی واکیل نے کہا کہ پولیٹیکل انتظامیہ نے ہم سے 472کنال اراضی کا مطالبہ کیا تو ہم نے 800 کنال زمین مفت دینے کی پیش کش کی لیکن پولیٹیکل انتظامیہ نہ اس میں کمیشن نہ ملنے کہ وجہ سے ہماری پیش کش کو رد کرتے ہوئے علاقہ کی مہنگی ترین زمین دینے پر زور دیا ۔ زنہوں نے کہا کہ زمین کے مالکان وقابقین کو اس شرط پر کم قیمت پر راضی کیا کہ اس سپورٹس کمپلیس کے ساتھ سزی اور فروٹ منڈیاں بنائی جائے گی اور ساتھ میں ٹرانسپورٹ آڈہ اور جانوورں کا مذبح خانہ بھی بنایا جائے گا جس کے تما م مراعات اکاخیل قبیلہ کے ڈیلی شاخ دری کندی کو دیئے جائیں گے لیکن افسوس کا مقام ہے کے تحریری معاہدہ کے ہوتے ہوئے پولیٹیکل ایجنٹ خیبرایجنسی اس میں روڑے اٹکا رہاہے اور عوام کے پیسے کو فیکس ڈیپازٹ میں رکھ کر اس پر بنکوں سے سود وصول کرنے کے لیے عوام کے ساتھ ظلم کیا جارہا ہے جس پر ہم خاموش نہیں رہیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر زمین پر کسی کی دعویداری ہے تو اس کے ساتھ ہر فورم پر بات کرنے کے لیے تیار ہے لیکن کسی کی ہوائی باتوں پر ہم اپنی ملکیتی زمین کے پیسے پولیٹیکل ایجنٹ کے بنک اکاونٹ میں سود کے ھصول کے لیے نہیں چھوڑ سکتے۔انہوں نے ارمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے مطالبہ کیا کہ فی کنال 5 لاکھ روپے کے حساب سے فوری طور پر زمین کی قیمت اداکی جائے اور پولیٹیکل انتظامیہ کو اس معاہدے کا پابند کیا جائے جو قوم اکاخیل کے ساتھ کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے ساتھ جو وعدہ کیا تھااس کے مطابق ہمارے تمام پیسے اور نوکریوں کا بھی جلد اعلان کیا جائے، سٹیڈیم کے ساتھ بڑے پلازوں انٹرنیشنل ہوٹلز کے علاوہ ترقیاتی فنڈ کا بھی فوراًجاری کیے جائے۔انہوں نے کہا کہ اگر ہمارے مطالبات نہ مانے گئے اور معاہدہ پر عمل نہیں کی گیا تو ہم عدالت کا دروازہ کھٹکٹانے پر مجبور ہونگے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر