الیکشن کمیشن، ارشد وہرا کو ڈی سیٹ کرنے کا ریفرنس، فریقین سے جواب طلب

الیکشن کمیشن، ارشد وہرا کو ڈی سیٹ کرنے کا ریفرنس، فریقین سے جواب طلب
الیکشن کمیشن، ارشد وہرا کو ڈی سیٹ کرنے کا ریفرنس، فریقین سے جواب طلب

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ڈپٹی میئرکراچی ارشدہ وہرہ کو ڈی سیٹ کرنے سے متعلق فاروق ستار کی درخواست پر فریقین سے تحریری جواب طلب کر لئے۔ ارشد وہرہ کو ایم کیو ایم پاکستان کے منشور و دیگر ریکارڈ فراہمی کا بھی حکم دیا ہے۔

چیف الیکشن کمشنرسردار رضا کی سربراہی میں الیکشن کمیشن نے ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار کی جانب سے ارشد وہرہ کو ڈی سیٹ کرنے سے متعلق درخواست پر سماعت کی۔ وکیل صفائی نے موقف اپنایا کہ ان کے موکل ارشد وہرہ نے ایم کیو ایم کا آئین، منشور فراہم کرنے کی درخواست کی تھی، ایم کیو ایم پاکستان اور ایم کیو ایم علیحدہ جماعتیں ہیں، ثابت کریں گے کہ ارشد وہرہ ایم کیو ایم کے ٹکٹ ہولڈر تھے، ایم کیو ایم پاکستان کے نہیں، یہ تمام لوگ بانی ایم کیو ایم کے کٹھ پتلی ہیں۔

فاروق ستار کے وکیل نے کہا کہ ارشد وہرہ کے پاس تفصیلات لینے کی وجوہات نہیں ہیں، وہ تاخیری حربے استعمال کر رہے ہیں۔ چیف الیکشن کمشنر سردار رضا نے حکم دیا کہ ارشد ووہرا کو الیکشن کمیشن کے ریکارڈ سے کاپی فراہم کی جائے، ایم کیو ایم سے منشور بھی لے کر دیا جائے۔ الیکشن کمیشن نے 11 جنوری تک فریقین کو تحریری جواب جمع کرانے اور آئندہ سماعت پر دلائل پیش کرنے کی ہدایت کی۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : قومی