چیف جسٹس نے لاہور ہائی کورٹ میں چینی کا استعمال ختم کرنے کا اعلان کردیا

چیف جسٹس نے لاہور ہائی کورٹ میں چینی کا استعمال ختم کرنے کا اعلان کردیا
چیف جسٹس نے لاہور ہائی کورٹ میں چینی کا استعمال ختم کرنے کا اعلان کردیا

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے لاہور ہائی کورٹ میں چینی کا استعمال ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جب تک افراد کی صحت اچھی نہیں ہو گی تو ادارہ آگے نہیں جا سکتا۔ اداروں کے صحت مند بنانے کے لئے سٹاف کا صحت مند ہونا ضروری ہے۔

پنجاب جوڈیشل اکیڈمی میں "صحت مند ادارے کے لئے صحت مند سٹاف" کے عنوان کے تحت سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے کہا کہ ہم ہائی کورٹ سے چینی (شوگر) ختم کر رہے ہیں۔صحت مند دماغ کے لئے بہت ضروری ہے کہ ہم اپنے دماغ سے منفی چیزیں ختم کردیں، اگر ہم ذہنی طور پر  مضبوط ہوں گے تو اچھے اور مضبوط فیصلے کر سکیں گے۔ پیزا اور دیگر فضول چیزوں کو اپنی زندگی سے نکال کر ورزش کو اپنانا ہوگا۔ روزانہ کی 10سے 15منٹ کی ورزش ہماری زندگی بدل دے گی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ خوشحال زندگی کے لئے ضروری ہے کہ یوگا اور ورزش کے ساتھ ساتھ اپنے کھانے پینے کا خیال رکھانا ہے اور اپنے اندر مثبت سوچ کو پروان چڑھانا ہے۔ اگر ہمارے ادارے کے افراد مضبوط ہونگے تو ہمارا ادارہ بہت آگے جائے گا اور اچھے اخلاق کے ساتھ سائلین کی مدد کر سکیں گے۔قبل ازیں یوگا ایکسپرٹس محمد اعظم اور اطہر خان نے یوگا ٹیکنیکس بتائیں اور باڈی بلڈنگ کے ماہر شعیب رضا کھوکھر نے جسم کو صحتمند توانا رکھنے کے لئے بنیادی ورزش بتائی۔ چیف جسٹس سید منصور علی شاہ کی روزانہ ورزش کے ویڈیو کلپس بھی دکھائے گئے۔ سیمینار میں رجسٹرار سید خورشید انور رضوی، ڈی جی ڈسٹرکٹ جوڈیشری محمد اکمل خان، پرنسپل سٹاف آفیسر ٹو چیف جسٹس شاہد شفیع، ایڈیشنل رجسٹرارز ڈاکٹر عبدالناصر سمیت لاہور ہائی کورٹ کے دیگر افسران اور ملازمین کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ سیمینار کے اختتام پر ورزش اور یوگا ایکسپرٹس کو سوونیئرز بھی دیئے گئے۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور