اپنے مردہ بھائی کی لاش کے ساتھ سو جاﺅ، سوتیلے باپ نے ایسی حرکت کر دی کہ سن کر سنگدل سے سنگدل شخص کی بھی روح کانپ اُٹھے

اپنے مردہ بھائی کی لاش کے ساتھ سو جاﺅ، سوتیلے باپ نے ایسی حرکت کر دی کہ سن کر ...
اپنے مردہ بھائی کی لاش کے ساتھ سو جاﺅ، سوتیلے باپ نے ایسی حرکت کر دی کہ سن کر سنگدل سے سنگدل شخص کی بھی روح کانپ اُٹھے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نیویارک (نیوز ڈیسک) کمسن بچوں کی شرارتیںکبھی کبھار بڑوں کو پریشان بھی کر دیتی ہیں لیکن یقینا کوئی بے رحم حیوان ہی ہو گا جو کسی بچے کو شرارت کرنے پر یوں تشدد کا نشانہ بنائے کہ جان سے ہی مار ڈالے۔امریکی شہری جیک منٹگمری ایک ایسا ہی درندہ ہے جس نے اپنے کمسن سوتیلے بیٹے پر ایسا وحشیانہ تشدد کیا کہ بیچارہ بچہ جان سے گزرگیا۔ صرف یہی نہیں بلکہ اس بدبخت نے بچے کی لہولہان لاش کو بستر پر لٹایا اور اس کے دو چھوٹے بھائیوں کے زبردستی اس کے ساتھ لٹا دیا۔ دونوں ننھے بچے رات بھر اپنے بھائی کی لاش کے ساتھ لیٹے رہے۔

’میری بہترین سہیلی نے ہی میرے منہ پر تیزاب پھینک دیا کیونکہ وہ سمجھتی تھی کہ۔۔۔‘ آج تک مردوں کو آپ نے ایسا کام تو کرتے دیکھا ہوگا لیکن سب سے قریبی سہیلی نے ہی اس لڑکی کا چہرہ کیوں بگاڑ دیا؟ کوئی مرد بھی تصور نہیں کرسکتا کہ۔۔۔
نیوز چینل 8 کے مطابق یہ بھیانک واقعہ اس وقت پیش آیا جب بچے کی والدہ دونیہ رسل کام پر گئی ہوئی تھی۔ وہ بدقسمت اپنے بچوں کا پیٹ پالنے کے لئے دو نوکریاں کر رہی تھی اور رات گئے گھر واپس آتی تھی۔ چھوٹے بچوں نے پولیس کو بتایا کہ جیک نے انہیں سونے کے لئے کہا تھا لیکن ان کا بھائی برائس بسکٹ کھانے کے لئے چپکے سے اٹھا جس پر جیک غصے میں آ گیا اور اسے مارنا شروع کر دیا۔ درندہ صفت جیک نے سات سالہ بچے کے سر اور پیٹ پر گھونسے مارے اور پھر اسے اٹھا کر ایک الماری میں دے مارا۔ بچے کے سر پر شدید چوٹ آئی اور وہ چند منٹ میں ہی دنیا سے رخصت ہو گیا۔ پتھر دل شخص نے اسے فرش سے اٹھایا اور بستر پر لٹا دیا جبکہ اس کے چھوٹے بھائیوں کو بھی اس کے ساتھ لیٹنے کو کہا۔ خوف سے کانپتے ہوئے دونوں بچے رات بھر اپنے بھائی کی لاش کے ساتھ لیٹے رہے۔
واقعے کی اطلاع ملنے پر پولیس نے حیوان صفت ملزم کو گرفتار کر لیا اور دوران تفتیش اس نے اپنے جرم کا اعتراف بھی کر لیا۔ اس کے خلاف قانونی کاروائی جاری ہے اور امید کی جا رہی ہے کہ اسے عبرتناک سزا سنائی جائے گی۔

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -