شدید سردی میں تنگی کے شہری علاقوں میں گیس کی ظالمانہ لوڈ شیڈنگ ‘عوام پریشان

شدید سردی میں تنگی کے شہری علاقوں میں گیس کی ظالمانہ لوڈ شیڈنگ ‘عوام پریشان

تنگی (جاوید علی)ٹھٹھرتی سردی میں تنگی کے شہری علاقوں میں گیس کی ظالمانہ لوڈ شیڈنگ نے اہل علاقہ کو شدید پریشانی میں مبتلا کر دیا ۔ شہری پان گیس اور لکڑیاں جلانے پر مجبور ۔لوڈشیڈنگ کے باوجود محکمہ سوئی گیس والوں کی جانب سے بھاری بلز بھجوائے گئے ۔تحصیل تنگی کے شہری علاقوں نصرت زئی ،براہ زئی ،گل آباد اوراسٹیشن کلے ،زیم ،جرعہ ،اخترآباد ، میں گیس کی ناروا لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہونے سے علاقہ مکینوں کوذہنی اذیت میں مبتلا کر رکھا ہے۔علاقہ مکین میاں عارف گل،اکرالدین ،دوسست محمد ،عابد علی ،راشد نواز ،صاحبزادہ یونس ،لحاظ اللہ ،محمدطفیل ،ملک ابرار،میاں ضیا ع الرحمن ،نوید جان زیم ،سعید علی ،شکیل خان ،سریر شیرپاؤ ،سراج خان ،عمر جان ،شوکت خان ودیگر کا کہنا کہ 21ویں صدی میں بھی ہم پر گیس اور بجلی کی لوڈشیڈنگ مسلط کیا گیا ۔گیس کی ناروا لوڈشیڈنگ سے گھریلوں خواتین کو کھانا تیار کرنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہیں ۔ گیس کی لوڈشیڈنگ کیوجہ سے شہری پان گیس سلنڈر بھروانے پر مجبور ہوگئے ہیں جبکہ زیادہ تر خواتین گھروں میں لکڑی جلا کرکھانا تیار کرتے ہیں ۔دوکانداروں نے پان گیس اور لکڑی کے قیمتوں میں خودساختہ اضافہ کیا اور وہ لوگوں کے مشکلات کا ناجائز پیدا اٹھا کر انکو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں جبکہ مقامی انتظامیہ نے بھی ان مافیا کیخلاف کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی اور عوام کو ان بھیڑیوں کے رحم وکرم پر چھوڑدیا ۔ انہوں نے کہا کہ گیس کی بلاجواز لوڈشیڈنگ کیوجہ سے بچے اکثر بغیر ناشتہ کئے بغیر سکول اور کالجز جانے پر مجبور ہو جاتے ہیں جسکی وجہ سے انکی تعلیم پر منفی اثر پڑ رہاہے ۔معززین علاقہ کا مزید کہنا تھا کہ ضرورت کے اوقات میں گیس کی لوڈشیڈنگ کیجاتی ہے لیکن اسکے باجود ہزاروں روپے کی بھاری بلز بھجوائے جاتے ہیں جو کہ ہمارے ساتھ سرار ظلم و ناانصافی ہے ۔ہمارے منتخب نمائندوں نے بھی ہمیں اکھیلاچھوڑ کر راہ فرار اختیار کرلی اور اب ہم کسی مسیحا کے انتظار میں بیٹھے ہیں ۔ فورم شرکاء نے بتایا کہ اچھنبے کی بات تو یہ ہے کہ سی این جی کے فلنگ اسٹیشن میں گیس کی پریشر پورا تو ہوتا ہے لیکن دوسری جانب گھریلوں صارفین کو گیس فراہم نہیں کیا جاتا جو کہ یہ ہمارے عوام کیساتھ سرار ناانصافی ہے۔ ممبر قومی اسمبلی ملک انور تاج سے جب اس سلسلے میں بات کی گئی توا نہوں نے بتایا کہ مجھے تنگی کے عوام کے مسائل کا پتہ ہے اور گیس لوڈ شیڈنگ کے سلسلے میں وہ بہت جلد زمہ دار افراد سے میٹنگ کرکے گیس کی لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کرینگے ۔انہوں نے بتایا کہ تنگی میں گیس کی کم پریشر ختم کرنے کیلئے وہ تنگی کیلئے الگ پائپ لائن پچھانے کا منصوبہ رکھتاہے اور اس پر عنقریب کام شروع ہوجائے گا۔ شہریوں نے دہمکی دیتے ہوئے کہا کہ گیس کی جاری ناروا لوڈشیڈنگ کو فوری طور پر ختم نہیں کیا گیا تو ہم سڑکو ں پر نکل کر محکمہ سوئی گیس اور منتخب نمائندوں کیخلاف احتجاج کرے گے اور جلاؤں گھیراؤں سے بھی گریز نہیں کیا جائے گا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر