لاکھوں روپے چھیننے والے بین الصوبائی ڈکیت گروہ کے تین ارکان گرفتار

لاکھوں روپے چھیننے والے بین الصوبائی ڈکیت گروہ کے تین ارکان گرفتار

صوابی( رپورٹ: محمد شعیب سے) صوابی پولیس نے منی چینجر سے 90لاکھ روپے چھیننے والے بین الصوبائی ڈکیت گروہ کے تین ارکان کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے دس لاکھ روپے بر آمد کر لی۔جب کہ دیگر ملزمان کی گرفتاری اور باقی رقم کی بر آمدگی کے لئے پولیس چھاپے مار رہی ہے۔ دو ملزمان پڑوسی نکلے جب کہ تیسرے کا تعلق ضلع بونیر سے ہے۔ اس سلسلے میں ایس پی انوسٹی گیشن صوابی محمد آیاز ملک نے ایک ہنگامی پریس کانفرنس میں میڈیا کو بتایا کہ یکم اکتوبر 2018کو دیہہ باجا میں مدعی سید رحمان اپنے موٹر کار میں جار رہے تھے کہ اسی اثناء میں ڈکیت گروہ کے ارکان نے آکر ان سے اسلحہ کی نوک پر 90لاکھ روپے چھین کر فرار ہوئے۔اطلاع ملتے ہی ڈی پی او صوابی سید خالد ہمدانی بروقت جائے وقوعہ پہنچ کر علاقہ میں بھاری نفری پولیس کو سرچ اپریشن کرنے کی ہدایت دی،اور سختی سے نوٹس لیتے ہوئے ایک ٹیم تشکیل دی، ایس پی انوسٹی گیشن محمد آیاز ملک کی قیادت میں،ڈی ایس پی صوابی خالد خان،ڈی ایس پی ظریف خان،ایس ایچ او نورالامیں خان،تفتیشی آفیسر انسپکٹر غنی سید خان،سب انسپکٹر قمر زمان خان اور آئی ایچ سی زاہد خان پر مشتمل ٹیم نے دن رات ایک کرکے ہر زاویے سے جدید خطوط کو بروئے کار لاتے ہوئے اور مدعی کی نشاندہی پر آخر کار ڈکیت گروہ کو ٹریس کیا،جس پر ڈی ایس پی صوابی خالد خان اور ایس ایچ او صوابی نورالامیں خان نے کامیاب چھاپہ زنی کرکے ڈکیت گروہ میں سے 3ملزمان زرولی ولد میر دوست ساکن بونیرکے علاوہ طارق ولد عبدالرازق ساکن باجا اور ہمایون ولد گل رحیم ساکن باجا جو کہ لوٹنے والے من چینجر کے ہمسائے تھے کو گرفتار کیے ملزمان کے قبضے سے لوٹی ہوئی لاکھوں روپے برآمد کیے گئے،جبکہ دوران تفتیش ملزمان سے مزید ساتھیوں کے بارے میں راز اگل دئیے،جس کی گرفتاری کیلئے پولیس کی سر توڑ کو شش جاری ہیں ڈی پی او صوابی سید خالد ہمدانی نے پولیس ٹیم کو توصیفی سرٹیفیکٹ اور نقدی انعامات کا اعلان کیا۔پولیس کی اس کامیاب کاروائی کو علاقہ عوام نے بے حد سراہا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر