پنجاب مینجمنٹ سروسز امتحانات کے قواعد وضوابط میں تبدیلی کیلئے دائر درخواستیں ناقابل سماعت

پنجاب مینجمنٹ سروسز امتحانات کے قواعد وضوابط میں تبدیلی کیلئے دائر ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب مینجمنٹ سروسز کے امتحانات کے قواعد وضوابط میں تبدیلی کیلئے دائر درخواستیں ناقابل سماعت قرار دے کرمسترد کردی ہیں۔جسٹس عائشہ اے ملک نے اصغر محمود خان ،عظمت اللہ،ذیشان حیدر اوروقاص سمیت 6درخواستگزاروں کی طرف سے دائر درخواستوں کی سماعت کی، جن میں حکومت،فیڈرل پبلک سروس کمیشن اور پنجاب پبلک سروس کمیشن کو فریق بنایا گیاتھا۔ درخواست گزاروں کی جانب سے موقف اختیارکیاگیا فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے تحت "مقابلہ "کے امتحانات سالانہ ہرسال ہوتے ہیں لیکن پنجاب کے مینجمنٹ سروسزگروپ ( پی ایم ایس)کے امتحانات کئی کئی سال نہیں ہوتے ، یہ امیدواروں سے امتیازی سلوک کے مترادف اور آرٹیکل4 اور 25 سے متصادم ہے۔پی ایم ایس کے امتحانات کے لئے سرکاری ملازمین کو بالائی عمر کی حد میں دو سال کی رعایت بھی نہیں دی جاتی۔درخواست گزاروں نے استدعا کی تھی کہ پی ایم ایس کے امتحانات میں شرکت کے لئے سرکاری ملازمین کی عمر 21سے37سال کی جائے،امتحان میں شرکت کے لئے تین چانس مقررکی جائیں اوریہ امتحان سالانہ بنیادوں پر لینے کاحکم دیاجائے۔عدالت نے درخواست مستردکرتے ہوئے قراردیاکہ امتحانات کا شیڈول جاری ہو چکا ہے ،جس میں مداخلت نہیں کی جاسکتی ہے۔

درخواستیں مسترد

مزید : صفحہ آخر