شہباز شریف کی کمر کی تکلیف میں اضافہ ڈاکٹروں کا نقل و حرکت محدود کرنے کا مشورہ

شہباز شریف کی کمر کی تکلیف میں اضافہ ڈاکٹروں کا نقل و حرکت محدود کرنے کا مشورہ

اسلام آباد( سٹاف رپورٹر )اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہباز شریف کی کمر کی تکلیف میں اضافہ ہوگیا جس کے بعد وہ پارلیمنٹ سے منسٹر انکلیو روانہ ہو گئے۔ شہباز شریف کی طبیعت خرابی پر آرتھوپیڈک ڈاکٹر کو طلب کیا گیا جس نے شہباز شریف کا معائنہ کیا اورانہیں نقل و حرکت محدود کرنے کا مشورہ دیا۔یاد رہے گزشتہ روز بھی مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف کو کمر میں درد کی شکایت کے باعث پمز ہسپتال منتقل کیا گیا جہا ں ان کا طبی معائنہ کیا گیا۔ میڈیکل بورڈ کی نگرانی میں شہبازشریف کی ایم آرآئی کی گئی۔ ایم آرآئی رپورٹ کے مطابق انکے مہروں میں خرابی کی علامات پائی گئیں،قبل ازیں پبلک اکانٹس کمیٹی کے چیئرمین شہباز شریف نے پی اے سی اجلاس کی صدارت کی اورکہا بجلی پیداو ا ر ی کمپنیوں کا مافیا متبادل توانائی کے منصوبے بننے نہیں دیتا۔ انہوں نے سینٹ میں قائد ایوان سینیٹر شبلی فراز کی سربراہی میں متبادل توانائی کے منصوبوں کا جائزہ لینے کیلئے کمیٹی قائم کر دی۔خیال رہے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کافی عرصہ سے کمر کی تکلیف میں مبتلا ہیں، اس سے قبل شہباز شریف کے خون کے نمونوں میں کینسر کی علامات بھی پائے جانے کا انکشاف ہوا تھا۔ اس سے قبل بھی کئی مرتبہ میڈیکل بورڈ منسٹر انکلیو میں شہباز شریف کا طبی معائنہ کر چکا ہے۔ یاد رہے شہباز شریف نیب کی حراست میں ہیں اور انہیں پارلیمنٹ کے اجلاس میں شرکت کرنے اور پبلک اکانٹس کمیٹی کی صدارت کرنے کیلئے لاہور سے اسلام آباد لے جایا جاتا ہے۔

شہباز شریف

مزید : صفحہ اول