روالپنڈی سے آنے والے 66سی ٹی ڈی اہلکاروں کا مستقبل داؤپرلگ گیا

روالپنڈی سے آنے والے 66سی ٹی ڈی اہلکاروں کا مستقبل داؤپرلگ گیا

لاہور(کرائم رپورٹر) سی ٹی ڈی پولیس نے روالپنڈی سے آنے والے 66پولیس اہلکاروں کو اپنی ٹیم کا حصہ نہ بنا کر ان کا مستقبل داؤ پر لگادیا ہے ۔انھیں دو ماہ کی تنخواہ بھی نہیں مل سکی ۔ متاثرہ اہلکاروں نے وزیر اعلی پنجاب اور آئی جی پو لیس پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔بتایا گیا ہے کہ سی ٹی ڈی پو لیس نے آر پی او روالپنڈی کو کمی نفری کی وجہ سے پولیس اہلکاروں کو بھجوانے کی درخواست کی تھی جس پر آر پی او روالپنڈی نے 66اہلکاروں کو سی ٹی ڈی پو لیس چوہنگ سنٹر جاکر رپورٹ کر نے کا حکم دیا اور وہاں سے ریلیو بھی کر دیا جب یہ اہلکا ر سی ٰ ٹی ڈی رپورٹ کر نے لا ہور ان کے آفس پہنچے توسی ٹی ڈی افسران نے یہ کہہ کر انھیں لینے سے انکار کر دیا کہ ان کی عمر یں 55سال سے زائد ہیں ۔ اب وہ گزشتہ دو ماہ سے روالپنڈی اور لا ہور سی ٹی ڈی آفس کے دھکے کھا رہے ہیں اور انھیں گز شتہ دو ماہ سے تنخواہ بھی نہیں مل سکی جس سے یہ اہلکار اور ان کے اہل خانہ سخت پر یشانی میں مبتلا ہیں ۔

مزید : علاقائی