پٹرولیم کی قیمتوں میں کمی ہونٹ کے منہ میں زیرہ کے برابر ہے‘ظاہر قیوم

پٹرولیم کی قیمتوں میں کمی ہونٹ کے منہ میں زیرہ کے برابر ہے‘ظاہر قیوم

لاہور(نیوز رپورٹر) لاہور ٹریڈرز رائٹس فورم کے وائس چےئرمین شیخ ظاہر قیوم نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کرنا خوش آئند ہے تاہم عوام عالمی منڈی میں پٹرولیم کی قیمتوں میں کمی کے تناسب سے حکومتی اقدام ہونٹ کے منہ میں زیرہ کے برابر ہے ۔ عوام توقع کر رہی تھی کہ پٹرولیم کی قیمتوں میں 15 روپے تک کمی کی جائے گی تاہم حکومت کو مہنگائی پر قابو پانے کیلئے نئے سال کے پہلے ماہ میں پٹرولیم کی میں مزید کمی کرنی چاہیے اس کے ساتھ ساتھ اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں بھی کمی کا اعلان کیا جائے ۔یہ بات انہوں نے گزشتہ روز لاہور ٹریڈرز رائٹس فورم کے مرکزی دفتر میں تاجروں کے ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہاکہ تاجر برادری چاہتی ہے کہ حکومت کے ساتھ بھر پور تعاون کرے تاہم اس کیلئے حکومت کو بھی تاجروں کے مسائل کو سمجھنا ہوگا اکیلے حکومت ملکی معیشت کی بحالی کیلئے کچھ نہیں کر سکتی اسے تاجر برادری کو ساتھ لے کر چلنا ہوگا۔ انہوں نے کہ نئے سال کے آغاز سے ہی حکومت کو معیشت کی بحالی اور مہنگائی میں کمی لانے کیلئے جنگی بنیادوں پر فیصلے کرنا ہونگے اور ان پر عمل درآمد کروانے کیلئے بلا تفریق آہنی ہاتھوں سے نمٹنا ہوگا۔ کیونکہ موجودہ حکومت کے دور اقتدار کے ابتدائی چند ماہ کے دوران ہی عوام پر مہنگائی کا بوجھ اس قدر بڑھ گیا ہے کہ غریب عوام کی چیخیں نکل گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کو اوگرا کی جانب سے بھجوائی گئی سمری کی مطابق پٹرولیم کی قیمتوں میں 15 روپے تک کمی کی سفارش کی گئی تھی تاہم حکومت کی عوام کی وسیع تر مفادات کو ملحوظ خاطر نہ رکھتے ہوئے محض 4 روپے 86 پیسے جبکہ ڈیزل کی قیمت میں صرف 4 روپے 26 پیسے کمی کا اعلان کیا ہے جو کسی صورت عوام الناس کے مفاد میں نہیں ہے ،جب عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہوتا ہے تو فوری طور پر ملک بھر میں پٹرول کی قیمتوں کو بڑھ ادیا جا تا ہے اب جب عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم کی قیمتوں انتہائی نیچے گر چکی ہیں تو پھر عوام کو بھی سستے داموں پٹرول میسر آنا چاہیے ۔ حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں فوری طور پر کمی کا اعلان کر کے عوام تک اس کے ثمرات پہنچائے جائیں اور ساتھ ہی کھانے پینے کی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں بھی کمی کا اعلان کیا جائے ۔

مزید : کامرس