ایم آئی ایس سسٹم کے منصوبے میں محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی بھرپور تکینکی معاونت فراہم کریگا ، کامران بنگش

ایم آئی ایس سسٹم کے منصوبے میں محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی بھرپور تکینکی ...

پشاور (سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس و ٹیکنالوجی اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش نے کہا ہے کہ محکمہ بحالی و آبادی کاری کے سیلابی خطرات کی پیشگی اطلاع اور ایم آئی ایس سسٹم کے منصوبے میں محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی بھر پور تکینکی معاونت فراہم کرے گاتاکہ کسی بھی ایمر جنسی کی صورت میں حکومت کی جانب سے بروقت اقدامات اٹھائے جا سکیں ۔انہوں نے کہا کہ مذکورہ منصوبے کے تحت صوبے کے دریاوؤں پر سیلابوں کی پیشگی اطلاع کے لئے مجوزہ ٹیلی میٹری سسٹم کی تنصیب میں بھی محکمہ آئی ٹی اپنا تعاون فراہم کرے گا اور اس نظام کے ذریعے الیکٹرانک طریقہ کار کے تحت آبی پیمانے کا پتہ چل سکے گا جسکے ضمن میں بروقت درکار احتیاطی تدابیر اٹھائے جاسکیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز اپنے دفتر میں پراونشل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے پراونشل ایمر جنسی اینڈ آپریشن سنٹر کی بہتری اور ایم آئی ایس سسٹم کے منصوبے کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں پی ڈی ایم اے منصوبے کے پراجیکٹ ڈائریکٹر و قاص الٰہی سمیت اتھارٹی کے دیگر افراد نے شرکت کی۔ اس موقع پر معاون خصوصی کو پی ڈی ایم اے کے مذکورہ منصوبے کے خدوخال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر پی ڈی ایم اے کے پراجیکٹ ڈائریکٹر نے بتاتے ہوئے کہاکہ محکمہ میں صوبے کے تمام اضلاع کیساتھ ایمرجنسی رابطہ کاری کے لئے پراونشل ایمرجنسی اینڈ آپر یشن سنٹر قائم ہے جو کسی بھی قدرتی آفت و حادثات کے سلسلے میں ہمہ وقت فعال رہتا ہے اور اس سنٹر کا تما م ڈپٹی کمشنردفاتر کیساتھ رابط رہتا ہے انہوں نے بتایا کہ ایک منصوبے کے تحت اس سنٹر کی آپریشنل کارکردگی کو بہتر بنانے کے لئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں جس کی صورت میں محکمہ آئی ٹی کی تکنیکی معاونت درکار ہوگی، اس موقع پر معاون خصوصی نے کہا کہ خیبر پختونخوا انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ محکمہ بحالی و آبادکاری کیساتھ اس منصوبے کے سلسلے میں اپنی بھر پور مدد فراہم کرے گا کیونکہ اس سے صوبے میں حادثات کے بارے میں بروقت اطلاعات اور رسپانس کا آسان نظام قائم ہو جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ڈویژنل لیول پر اتھارٹی کے قائم کنٹرول رومز کو کثیر مقاصد کے لئے استعمال میں لایا جاسکے گا جبکہ اس منصوبے کے تحت مجوزہ ٹیلی میٹری سسٹم سے الیکٹرانک طریقہ کے ذریعے دریاوؤں کی پیشگی فلڈوارننگ کا پتہ چل سکے گا اور اس سلسلے میں بروقت احتیاطی تدابیر اٹھائے جاسکیں گے۔

مزید : کراچی صفحہ اول