باپ نے اپنی جواں سالہ بیٹی کو پٹرول چھڑک کر آگ لگادی، وجہ ایسی کہ کوئی سوچ بھی نہیں سکتا

باپ نے اپنی جواں سالہ بیٹی کو پٹرول چھڑک کر آگ لگادی، وجہ ایسی کہ کوئی سوچ ...
باپ نے اپنی جواں سالہ بیٹی کو پٹرول چھڑک کر آگ لگادی، وجہ ایسی کہ کوئی سوچ بھی نہیں سکتا

  

مہارشٹرا(ویب ڈیسک) بھارت میں باپ نے اپنی 16 سالہ بیٹی کو موبائل پر کسی سے بات کرتے دیکھا تو اس پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگادی۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ریاست مہاراشٹرا میں واقع ویرار میں ایک اندوہناک واقعہ پیش آیا، جب 35 سالہ محمد مرتضیٰ منصوری نے اپنی 16 سالہ بیٹی شائستہ کو موبائل فون پر کسی سے بات کرتا دیکھا تو غصے میں آگ بگولہ ہوگیا، بیٹی سے پہلے موبائل فون چھین کر زمین پر پٹخ دیا اور پھر بیٹی پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگادی۔

بیٹی کی چیخیں سن کر ماں نے اہل محلہ کی مدد سے شائستہ کو قریی نجی اسپتال پہنچایا، لڑکی کی حالت دیکھ کر ہسپتال انتظامیہ نے اسے کنگ ایڈورڈ میموریل ہسپتال لے جانے کا کہا، شائستہ کو فوری طور پر متعلقہ اسپتال لے جایا گیا جہاں وہ دوران علاج دم توڑ گئی، طبی عملے کا کہنا ہے کہ واقعے میں شائستہ کا 70 فیصد جسم جھلس چکا تھا، ڈاکٹروں نے لڑکی کو بھرپور کوشش کی تاہم لڑکی کا جسم 70 فیصد تک جھلس چکا تھا۔

ماں کے مطابق شائستہ کو فون پر باتیں کرتا دیکھ کر شوہر کو شک گزرا کہ وہ کسی لڑکے سے بات کررہی ہے حالانکہ ایسا کچھ نہیں تھا، دوسری جانب پولیس نے محمد مرتضیٰ کو حراست میں لینے کے بعد ان کے خلاف اقدام قتل کا مقدمہ درج کرلیا۔

مزید : جرم و انصاف