یہ بات طے ہے کہ ترکی نے نواز شریف کے حوالے سے بات کی :سہیل وڑائچ کا دعویٰ

یہ بات طے ہے کہ ترکی نے نواز شریف کے حوالے سے بات کی :سہیل وڑائچ کا دعویٰ
یہ بات طے ہے کہ ترکی نے نواز شریف کے حوالے سے بات کی :سہیل وڑائچ کا دعویٰ

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار سہیل وڑائچ نے کہاہے کہ نواز شریف کے معاملے پر ترکی کے ساتھ نامہ وپیام توضرور ہواہے ، اب یہ بات مانی جائے گی یانہ مانی جائیگی یہ توبعد کی بات ہے لیکن یہ بات طے ہے کہ ترکی نے اس حوالے سے بات کی ہے ۔

جیو نیوز کے پروگرام ”آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ“ میں گفتگو کرتے ہوئے سہیل وڑائچ نے کہا کہ اس وقت پیپلز پارٹی کی زبان سخت ہے اوراس کی وجہ یہ ہے کہ پیپلز پارٹی چاہتی ہے کہ شائداس طرح ان کو کوئی راستہ مل جائے ۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ سمجھتی ہے کہ ان پرجوسختی ہے اس میں سٹیبلشمنٹ کا کردار کم اور تحریک انصاف کازیادہ ہے ، اس لئے وہ یہ چاہتی ہے کوئی تیسر ی قوت مداخلت کرے ، اس کاپتہ عمران خان کے ترکی سے واپس آنے کے بعد چلے گا ۔ انہوں نے کہا کہ فوادچودھری کراچی نہیں جا سکے جس کی وجہ یہ ہے کہ کسی ادارے نے ان کو روکاہے کہ ابھی ٹھہر جائیں ، اتنی تیز ی نہ دکھائیں ۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف اگر اچھا کام کرے گی تو شائد سب کودبا دیگی لیکن حکومت کارکردگی نہ دکھا سکی تو نہ کسی کو دبا سکے گی اور نہ ہی ادارے اس کے ساتھ رہیںگے اورجو لوگ جیل میںہیں وہ بھی باہر آجائیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے معاملے پر ترکی کے ساتھ نامہ وپیام توضرور ہواہے ، اب یہ بات مانی جائے گی یانہیں مانی جائیگی یہ توبعد کی بات ہے لیکن یہ بات طے ہے کہ ترکی نے اس حوالے سے بات کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں عمران خان اتنے بڑے یوٹرن کیلئے تیار نہیں ہونگے لیکن بات یہ ہے کہ فیصلہ صرف عمران خان نے نہیں کرنا اورلوگ بھی اس معاملے میں شامل ہیں۔

مزید : قومی