پاکستان اور متحدہ عرب امارات کی اقتصادی شراکت داری مزید مضبوط ہوگی، غلام دستگیر

پاکستان اور متحدہ عرب امارات کی اقتصادی شراکت داری مزید مضبوط ہوگی، غلام ...

  



ابوظبی (آئی این پی) متحدہ عرب امارات میں پاکستان کے سفیر غلام دستگیر نے کہا ہے کہ پاکستان میں پٹرولیم، بنیادی ڈھانچے کے شعبوں اور چین پاکستان اقتصادی راہداری میں سرمایہ کاری کے بے پناہ مواقع ہیں جن سے متحدہ عرب امارات فائدہ اٹھا سکتا ہے۔ جمعرات کو متحدہ عرب امارات کی نیوز ایجنسی، وام کے ساتھ ایک خصوصی انٹرویو میں غلام دستگیر نے کہا کہ پاکستان کے ان شعبوں میں مواقع جبکہ متحدہ عرب امارات کے پاس سرمایہ کاری کی صلاحیت ہے۔ انھوں نے کہا کہ ان منصوبوں میں جنوب مغربی ساحل پر واقع گوادر بندرگاہ بھی شامل ہے جو بنیادی ڈھانچے میں آزادی کے بعد سے پاکستان کا سب سے بڑا منصوبہ ہے۔ابوظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید النہیان پاکستان کے ایک روزہ دورے پر جمعرات کے روز پر اسلام آباد پہنچے تھے۔متحدہ عرب امارات کی حکومت کے پاکستان میں متعدد منصوبے چل رہے ہیں جن میں یو اے ای پاکستان تعاون پروگرام، یو اے ای پی اے پی کے تحت صحت اور بنیادی ڈھانچے کے منصوبے بھی شامل ہیں۔ متحدہ عرب امارات نے پاکستان میں پولیو کے خاتمے کے لئے بھی متعدد کاوشیں کیں۔سفیر نے کہا کہ پاکستان اس سلسلے میں مزید شراکت کے لئے تیار ہے۔غلام دستگیر نے کہا کہ سیاحت ایک اور اہم شعبہ ہے جو دونوں ممالک کے لئے مساوی سود مند ہے۔ انھوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات میں پاکستانیوں کی ایک بہت بڑی کیمونٹی ہیجو اس ملک کی ترقی اور خوشحالی میں کردار ادا کررہی ہیاور متحدہ عرب امارات کی حکومت کی طرف سے اس کی تعریف کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تعاون کے امکانات بہت مضبوط ہیں۔ پاکستانی سفیر نے کہا کہ مستقبل میں دونوں ممالک کے مابین اقتصادی شراکت یقینی طور پر مستحکم ہوگی۔غلام دستگیر نے کہا کہ شیخ محمد بن زاید کا دورہ پاکستان بہت اہم اور دونوں ممالک کی قیادت کے درمیان قریبی رابطے کا عکاس ہے۔ انکا کہنا تھا کہ اس قسم کے دورے سے دونوں ملکوں کی قیادت کو باہمی مفاد کے تمام دوطرفہ اور کثیرالجہت امور پر تبادلہ خیال کرنے کا موقع ملتا ہے۔

غلام دستگیر

مزید : علاقائی


loading...