پارلیمنٹ میں اپوزیشن اور حکومت دست و گریباں ہیں، فواد چوہدری

پارلیمنٹ میں اپوزیشن اور حکومت دست و گریباں ہیں، فواد چوہدری

  



اسلام آباد(آئی این پی)وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا  ہے کہ پارلیمنٹ میں اپوزیشن اور حکومت دست و گریباں ہیں،لگتا ہے سب دھینگا مشتی میں پڑ گئے ہیں، ایسا نہ ہو کہ اتھارٹی ریت کی طرح ہمارے ہاتھ سے نکل جائے اور ہم ایک دوسرے کا منہ دیکھتے رہیں، اس لئے میں نے رفتار مدھم کرنے پر زوردیا ، عدلیہ کہتی ہے عدلیہ کا احتساب عدلیہ کرے، فوج کہتی ہے فوج کا احتساب فوج کرے اور تمام ادارے مل کر سیاستدانوں کا احتساب کرنا چاہتے ہیں، نیب قوانین میں ترمیم کے بعد چیئرمین تگڑے نہیں رہیں گے۔جمعرات کو نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا کہ پارلیمنٹ میں اپوزیشن اور حکومت دست و گریباں ہیں،لگتا ہے سب دھینگا مشتی میں پڑ گئے ہیں، ایسا نہ ہو کہ اتھارٹی ریت کی طرح ہمارے ہاتھ سے نکل جائے اور ہم ایک دوسرے کا منہ دیکھتے رہیں، اس لئے میں نے رفتار مدھم کرنے پر زوردیا۔انہوں نے کہا عدلیہ کہتی ہے عدلیہ کا احتساب عدلیہ کرے، فوج کہتی ہے فوج کا احتساب فوج کرے اور تمام ادارے مل کر سیاستدانوں کا احتساب کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نیب قوانین پر حکومت اور اپوزیشن پر بات ہوسکتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ نیب قوانین میں ترمیم کے بعد چیئرمین تگڑے نہیں رہیں گے۔  پاکستان تحریک انصاف، پاکستان پیپلزپارٹی اور (ن) لیگ  کا اپنا اپنا منشور ہے، (ن) لیگ کہتی ہے ہم قرضے لیکر زیادہ ترقی کریں گے، پیپلزپارٹی اداروں کی نجکاری کے حق میں ہے جبکہ ہم ان کے درمیان میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا میثاق معیشت پر نہیں ہوگا، میثاق الیکشن کمشنر پر ہوگا، ہم اس پر ضد میں کیوں ہیں کہ چیف الیکشن کمشنر ہمارا بندہ ہو۔انہوں نے کہا کہ قانونی ماہرین نے نیب ترمیمی آرڈیننس کی مخالفت نہیں صرف اپوزیشن نے شورمچایا، احتساب سب کا ہونا ہے، احتساب کو روکا نہیں جا سکتا، ہم ووٹ ہی احتساب کیلئے لے کے آئے ہیں،نیب قانون کے آنے کے بعد چیئرمین نیب کے اختیارات کم ہو جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن ان باتوں کو چھوڑ دے جن باتوں پر بات نہیں ہوسکتی،ان باتوں پر ساتھ چلے جن پر بات ہوسکتی ہے۔ہم الیکشن کمشنر،نیب قوانین،اداروں اختیارات پر بات کرسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آرمی چیف کی مدت ملازمت کی کمیٹی کے مذاکرات مثبت ہیں اسی طرح ہم الیکشن کمیشن کیلئے بھی کمیٹی بنائیں گے۔ 

فواد چوہدری

مزید : صفحہ آخر


loading...