بھارت کا چاند پر خلائی گاڑی اتارے کے مشن ”چند ریاں تھری“ کا اعلان

بھارت کا چاند پر خلائی گاڑی اتارے کے مشن ”چند ریاں تھری“ کا اعلان

  



بنگلور(آئی این پی)بھارت نے چاند کی سطح پر خلائی گاڑی اتارنے کے مشن چندریان 2کی ناکامی کے چند ماہ بعدنئے مشن چندریان 3کا اعلان کر دیا۔بھارت کی خلائی ایجنسی کے سربراہ کے سیون نے اس نئے مشن کے بارے میں بتایا کہ سب کام منصوبے کے مطابق ٹھیک چل رہا ہے۔ انڈیا یہ مشن 2020میں لانچ کرنا چاہتا ہے لیکن یہ 2021میں جا سکتا ہے۔ اس کی کامیابی کی صورت میں انڈیا چاند پر خلائی گاڑ ی اتارنے والا چوتھا ملک بن جائیگا۔ مشن کی کامیابی سے انڈیا کی کم خرچ خلائی مشن بنانیوالے ملک کی حیثیت سے شہرت مزید مضبوط ہو جائیگی۔اب تک امریکہ، روس اور چین ہی چاند کی سطح پر خلائی گاڑیاں اتار چکے ہیں۔کے سیون نے صحافیوں کو بتایا نیا مشن چندریان 2 سے ملتا جلتا ہو گا۔ چندریاں 2انڈیا کی خلائی ایجنسی کی طرف سے سب سے مشکل منصوبہ تھا۔ اس کا ٹارگٹ چاند قطب جنوبی پر خلائی گاڑی اتارنا تھا جہاں اب تک کسی اور ملک نے مشن نہیں اتارا۔ اس کا مقصد وہاں پانی، معدنیات کی تلاش اور چاند پر زلزلوں کی طاقت کی پیمائش تھا۔لیکن چندریاں 2 ستمبر میں ناکام ہو گیا تھا جب اس کی چاند گاڑی بے قابو ہو کر چاند کی سطح پر گر گئی تھی۔کے سیون نے کہا نیا مشن بھی اسی مقام پر اترے گا۔ نئے آلات کی قیمت 26 ملین پانڈ یا 35 ملین ڈالر ہے جبکہ پورے مشن پر لاگت اس سے زیادہ ہو گی۔خلا کے محکمے کے جونیئر وزیر جتندر سنگھ نے کہا چندریاں 3 کافی کم خرچ مشن ہو گا۔انہوں نے اخبار ٹائمز آف انڈیا کو بتایا انڈیا کا آربٹر تو پہلے ہی چاند کے مدار میں ہے اسلئے خرچ کم ہو گا۔چاند پر بغیر خلا باز کے خودکار خلائی گاڑی اتارنا انڈیا کا کم خرچ خلائی تحقیق کے وسیع تر منصوبوں کا ایک حصہ ہے۔کے سیون نے کہا انڈیا 2020 میں کم سے کم 25 خلائی مشن لانچ کرنا چاہتا ہے۔ مدار میں خلا باز بھیجنے کا منصوبہ بھی پروگرام کے مطابق چل رہا ہے۔ مشن کیلئے چار خلا باز چنے گئے ہیں جن کی ٹریننگ اس ماہ کے آخر میں روس میں شروع ہو جائیگی۔ توقع ہے مشن پر تین خلا باز جائیں گے اور یہ مشن 2022 میں متوقع ہے۔

مشن چندریان تھری

مزید : علاقائی