جماعت اسلامی اقامت دین کی منظم تحریک ہے، حافظ نعیم الرحمن

  جماعت اسلامی اقامت دین کی منظم تحریک ہے، حافظ نعیم الرحمن

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی حلقہ کراچی سے وابستہ ارکان کی تجدید ِ عہد رکنیت کے لیے ادارہ نور حق میں ایک خصوصی اجتماع کا انعقاد کیا گیا۔ تمام ارکان نے دستور ِ جماعت اسلامی میں درج عہد نامہ حلف ِ رکنیت پڑھا اس موقع پرامیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے ارکان سے خطاب کیا اور ان کی کامیابی اور استقامت کے لیے دعا کی۔واضح رہے کہ تجدید عہد ِ رکنیت کا عمل جماعت اسلامی پاکستان کی مرکزی مجلس شوریٰ کے ایک فیصلے کے تحت ملک بھر میں جاری ہے۔ حافظ نعیم الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جماعت اسلامی دیگر پارٹیوں یا سیاسی گروہوں کی طرح کوئی جماعت نہیں بلکہ یہ اقامت دین کی ایک منظم تحریک اور جدو جہد ہے۔ جس کا آغاز مولانا سید ابو اعلیٰ مودودی ؒ نے 1941میں کیا تھا۔ جماعت اسلامی لوگوں کو کسی ذات، برادری، رنگ و نسل یا مسلک کی طرف نہیں بلکہ صرف اللہ اور اس کے رسول ؐ کی اطاعت و فرما برداری کی طرف بلاتی ہے۔ ہماری دعوت اللہ کی زمین پر اللہ کی حکمرانی قائم کرنا اور اللہ کے بندوں کو صرف اور صرف اللہ کی بندگی میں لانا ہے۔ اس تحریک میں شامل ہو کر دین کو قائم کرنے کی جدو جہد کرنے کا مقصد رضائے الٰہی اور جنت کا حصول ہے۔ جماعت اسلامی ایک اجتماعیت کا نام بھی ہے اور اللہ تعالی کا شکر ہے اس نے ہمیں اقامت دین کی تحریک اور اجتماعیت سے وابستہ کیا۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ ہماری تحریک اور جدو جہد میں ارکان ِ جماعت کا کردار بہت اہم ہے۔ ان پر بڑی ذمہ داریاں عائد ہو تی ہیں۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ جماعت اسلامی نہ صرف دعوت ِ اللہ کا فریضہ انجام دے رہی ہے بلکہ عوامی خدمات اور مسائل کے حل کے لیے بھی سر گرمِ عمل ہے اور یہ کام بھی خلقِ خدا کی خدمت کے جذبے کے تحت انجام دیئے جاتے ہیں۔ جماعت اسلامی پوری امت کا ایک جسد واحد ہونے کے تصور پر یقین رکھتی ہے اور دنیا بھر میں جہاں جہاں مسلمانوں پر مظالم ڈھائے جارہے ہیں ان کے حق میں آواز بلند کرتی ہے۔ اتحاد امت اور ہم آہنگی کے لیے ہمیشہ سرگرم رہتی ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...