مہاجر 2020ء کا سال جدوجہد کے طورپر منائیں: ڈاکٹر سلیم حیدر

مہاجر 2020ء کا سال جدوجہد کے طورپر منائیں: ڈاکٹر سلیم حیدر

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ سال 2020ء مہاجر حقوق کی جدوجہد کے سال کے طورپر منارہے ہیں۔ اس سال تمام مہاجر رہنماؤں اور زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے سرکردہ مہاجر وں کی ذمہ داری ہے کہ وہ مہاجر قوم میں خاص طورپر مہاجر نوجوانوں میں پائی جانے والی مایوسی اور بے یقینی کو دور کریں۔ کیونکہ مہاجر نوجوان ملازمتیں نہ ملنے کے باعث تعلیم سے دور ہوتے جارہے ہیں۔ انہیں مایوسی سے نکل کر اپنی تعلیم اور تربیت پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ ماضی میں مہاجروں کے ساتھ اس سے بھی برے حالات رہے ہیں۔ 1973ء میں ذوالفقار علی بھٹو کے دور حکومت میں جب مہاجروں کی صنعتیں، بینک، اسکول اور روزگار کے مواقع ان سے چھین کر انہیں قومی تحویل میں لیا گیا تھا او رمہاجروں پر روزگار کے دروازے بند کردیئے گئے لیکن وقت نے ثابت کیا کہ اس وقت بھی مہاجر ثابت قدم رہتے ہوئے اپنے حقوق کی جدوجہد کرتے رہے، انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی نے ہر دور میں مہاجروں کا استحصال کیا ہے، یہی وجہ ہے کہ 1977ء میں احساس محرومی کا شکار مہاجروں نے پی این اے کی تحریک کے ذریعے ذوالفقار علی بھٹو کو تختہ دار تک پہنچایا اور اب بھی سندھ کے مہاجر حالات سے دلبرداشتہ ہونے کے بجائے اپنے حقوق کی جدوجہد جاری رکھیں، قوموں کی تاریخ میں اچھے برے حالات آتے ہیں، قیادتیں دھوکہ بھی دیتی ہیں، تحریکوں کو ہائی جیک بھی کرلیا جاتا ہے لیکن جو قومیں ثابت قدم رہتی ہیں وہ کامیابی سے ہمکنار ہوتی ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...