سانحہ تیز گام‘ 2ماہ گذرنے کے باوجود انکوائری مکمل نہ ہوسکی

  سانحہ تیز گام‘ 2ماہ گذرنے کے باوجود انکوائری مکمل نہ ہوسکی

  



ملتان(نمائندہ خصوصی)سانحہ تیزگام کی تین ہفتے میں مکمل ہونیوالی انکوائری دوماہ کاعرصہ گزرجانے کے باوجودمکمل نہ ہوسکی ہے جبکہ(بقیہ نمبر30صفحہ12پر)

31اکتوبرکوچنی گوٹھ کے قریب تیزگام کی خاکسترہونے والی تینوں بوگیوں کوبھی تاحال مغل پورہ ورکشاپ نہ بھجوایاجاسکاہے۔بتایاجاتاہے کہ کراچی سے راولپنڈی جانے والی تیزگام کی دواکانومی اورایک اے سی کلاس بوگی میں چنی گوٹھ اورلیاقت پوراسٹیشنوں کے درمیان آگ بھڑک اٹھی تھی تینوں بوگیوں میں تبلغی اجتماع میں شرکت کے لئے جانے والے شرکاء سواررتھے حادثہ میں 76کے قریب مسافرجاں بحق ہوگئے تھے وفاقی وزیرریلوے نے تین ہفتوں میں انکوارئری رپورٹ مکمل کرنے کااعلان کیاتھا۔تاہم دوماہ کاعرصہ گزرنے کے باوجودنہ توانکوارئری رپورٹ مکمل ہوسکی ہے اورنہ ہی جلنے والی بوگیوں کومغل پورہ ورکشاپ پہنچایاجاسکاہے۔ریلوے ذرائع کے مطابق فیڈرل گورنمنٹ انسپکٹرآف ریلویزنے ہدائت کی ہے کہ انکوائری مکمل ہونے تک متاثرہ بوگیوں کوچنی گوٹھ اسٹیشن سے منتقل نہ کیاجائے۔

تیز گام

مزید : ملتان صفحہ آخر