15سال سے جاری چھوٹ ختم‘ سنیماؤں   پر تفریحی ٹیکس کارواں ماہ سے نفاذ 

15سال سے جاری چھوٹ ختم‘ سنیماؤں   پر تفریحی ٹیکس کارواں ماہ سے نفاذ 

  



ملتان (نیوز رپورٹر) حکومت پنجاب کی جانب سے 15 سال چھوٹ دینے کے بعد جنوری 2020ء  سے صوبہ بھر کے سینماوں پر تفریحی ٹیکس کے نفاذ کا فیصلہ کرلیا ہے ذرائع کے مطابق(بقیہ نمبر24صفحہ12پر)

 2004ء  کے وسط میں فلم انڈسٹری کو درپیش بحران کے پیش نظر حکومت پنجاب کی جانب سے پاکستان فلمز ایگزیبیٹر ایسوسی ایشن کی درخواست پر پانچ سال کے لیئے تفریحی ٹیکس کی چھوٹ دی گئی جبکہ 2009ء  میں اس تفریحی ٹیکس چھوٹ کی 2014ء  تک توسیع دی گئی  جبکہ موجودہ حکومت کی جانب سے 2019ء  تک مزید سابقہ پانچ سالہ ٹیکس معاف کرنے کے بعد جنوری 2020ء  سے تفریحی ٹیکس لاگو کرنے کا حتمی فیصلہ کرلیا ہے جس پر فلمز ایسوسی ایشن نے حکومتی ٹیکس کی مشروط وصولی پر آمادگی ظاہر کردی ہے فلمز ایسوسی ایشن کی جانب سے سیکرٹری ایکسائز ٹیکسیشن پنجاب کو تحریری مراسلہ میں موقف اپنایا ہے کہ نئے سینماوں پر پانچ سالہ تفریحی ٹیکس کی چھوٹ کو برقرار رکھا جائے سینماوں کو ایکسائز انسپکٹرز کی چیکنگ سے مستثنی قرار دیا جائے سینما محکمہ ایکسائز کو ریٹ مطابق الیکٹرانک ڈیٹا فراہم کرنے کے پابند ہوں گے اور فی ٹکٹ تفریحی ٹیکس کی شرح5۔ 0 مقرر کی جائے یعنی 100 روپے کے ٹکٹ پر 95 پیسے جس پر ڈی جی ایکسائز پنجاب نے صوبہ بھر کے ڈویڑنل ایکسائز دفاتر سے تفریحی ٹیکس کے حوالے سے تجاویز طلب کرلی ہیں۔

تفریحی ٹیکس 

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...