پاکستان ہاکی فیڈریشن کا جونیئرٹیم مینجمنٹ اور ٹیرنگ کیمپ کا اعلان

    پاکستان ہاکی فیڈریشن کا جونیئرٹیم مینجمنٹ اور ٹیرنگ کیمپ کا اعلان

  



لاہور (سپورٹس رپورٹر)سیکرٹری جنرل پاکستان ہاکی فیڈریشن محمد آصف باجوہ نے چیئرمین سلیکشن کمیٹی منطور حسین جونیئر کے ساتھ پی ایچ ایف ہیڈ آفیس لاہورمیں پریس کانفرنس کرتے ہوے جونیر ٹیم مینجمنٹ اور ٹیرنگ کیمپ کا اعلان کیا۔ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سیکرٹری آصف باجوہ کی پریس کانفرنس کرتے ہوے کہا کہ پوری قوم کو نئے سال کی مبارکباد، نیا سال ہاکی کے لیے بہترین سال ثابت ہوگا۔ نئے سال کا آغاز نئے سرے سے کرنے جا رہے ہیں۔ اس سال ہاکی ٹیم کامیابیوں کی طرف بڑھے گی اورکھویا ہوا مقام حاصل کریں گے۔ جب یہ سال 2020 ختم ہوگا تو ہاکی پر بہترمقام پر ہوگی۔ ہم نے جونیئر چینپئن شپ کروائی جس سے جونیئر لیول پر ٹیلنٹ کو آگے بڑھنے کا موقع فراہم کیا گیا۔ پاکستان نیشنل جونیئرہاکی چیمپئن شپ میں حصہ لینے والے کھلاڑیوں کو انٹرنیشنل لیول پر موقع دیا جائے گا۔ جونیئر کھلاڑیوں کو مناسب مواقع نہیں فراہم کیے گئے۔چارجون کو پاکستان جونیئر ہاکی ٹیم ڈھاکہ میں جونیئر ہاکی ایشیا کپ کھیلے گی۔ جونیئر ایشیا کپ، جونیئر ورلڈکپ کے لیے کوالیفائی راؤنڈ بھی ہوگا۔ ایشیا کپ میں سے چار ٹیمیں جونیئر ورلڈکپ کے لیے کوالیفائی کریں گی۔سلیکشن کمیٹی کا کام قابل تعریف ہے اور جو ٹیلنٹ نکالا ہے پاکستان ہاکی کی مظبوط بنیاد رکھے گا۔ بارہ جنوری سے تربیتی کیمپ لگایا جائے گا۔ ان لڑکوں میں سے ہم شارٹ لسٹ کریں گیاور لڑکوں کو انٹرنیشنل لیول پر مقابلوں کے لیے تیار کریں گے۔پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سیکرٹری آصف باجوہ نے صدر پی ایچ ایف بریگیڈیئر ر خالد سجاد کھوکھرکی مشاورت سے جونیر ٹیم مینجمنٹ کا اعلان کیا۔

دانش کلیم ہیڈ کوچ، ساتھ سابق کپتان ہاکی ٹیم محمد عمران، مدثر علی خان اور رانا ظہیر بابر ہوں گے۔ ٹیم میں ہمیشہ فٹنس کی کمی رہی ہے اوراسی لیے عابد حمید کو ہم نے فٹنس کی زمہ داری دی ہے۔ تمام مینجمنٹ کو یہ ذمہ داری دی گئی ہے کہ لڑکوں کو مکمل طور پر تیار کریں۔ جو کوچزز تعینات کیے گئے ہیں ان کی کارکردگی ہاکی میں بہت بہتر رہی ہے۔ دانش کلیم، محمد عمران اور مدثر، رانا ظہیر بابر اپنے اپنے ڈیپارٹمنٹ کی ٹیموں کی کوچنگ کررہے ہیں اوران کوچززنے کھلاڑیوں کے ساتھ خاصہ کام کیا ہے۔پاکستان ہاکی کا سفر بہتری کی طرف جاری ہے جو بہتر سے بہتر ہوجائے گی۔ ازلان شاہ ہاکی ٹورنامنٹ میں شرکت کرنا اس بات کا ثبوت ہے۔ جلد ہی ازلان شاہ ہاکی ٹورنامنٹ کے لیے کیمپ بھی لگے گا۔ رینکنگ سسٹم بدل گیا ہے اب میچزز کی پرفارمنس کی بنیاد پر پوائنٹس ملینگیکوشش ہے پاکستان ہاکی رواں سال چالیس سے زائد میچزز کھیلیگی تاکہ رینکنگ پوائنٹس بہتر کیے جا سکیں۔ وعدہ کرتا ہوں کہ اس سال ہاکی ٹیم سترہ نمبر پر نہیں بلکہ اوپر آئے گی۔ پاکستان ہاکی فیڈریشن اپنی سرگرمیاں بڑھا رہی یے۔ ڈومیسٹک لیول پر جونیئر اور سینئرز ہاکی ٹورنامنٹس کرانے کا پلان کیا گیا ہے۔ پاکستان ہاکی لیگ بھی اس سال ہر صورت ہوگی۔ پاکستان ہاکی فیڈریشن بہت جلد مکمل پلان اور شیڈول سے آگاہ کرے گی۔ ہم نے ہاکی ایونٹس کروائے اور آنے والے دنوں میں ویمن کے بھی ہاکی ایونٹس کروانے جارہیہیں۔ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے پاس وسائل نہیں ہیں۔ پاکستان ہاکی فیڈریشن نیک نیتی سے کام کررہی ہے۔ ہمیں اس وقت میڈیا، حکومت اورعوام کے تعاون کی ضرورت ہے۔چیئرمین ہاکی سلیکشن کمیٹی منظور جونیئرنے کہا کہ جون میں ہم ہاکی کے ساتھ منسلک ہوئے، چھ ماہ کے اندر ہم نے ہاکی کی بہتری میں اہم کردارادا کیا ہے۔ ہم نیک نیتی کے ساتھ آگے بڑھ رہے ہیں۔ ماضی میں جو غلطیاں ہوئیں ہیں انہیں دہرانا نہیں چاہتے۔ پاکستان ہاکی ٹیم کی بلندی کا وقت شروع ہوچکا ہیجونیئر ٹیم کے زریعے پاکستان کو نیا ٹیلنٹ دیں گے۔ جونیئر ٹیم کے لڑکے پاکستان ہاکی ٹیم کا مستقبل ہیں۔ کوچزز کے ساتھ خود بھی تعاون کریں گے۔ کیمپ میں کھلاڑیوں پر بریک بینی سے کام کریں گے۔ کیمپ میں جو لڑکے آئیں گے ان کے ساتھ مل کر ان کی تربیت کریں گیاس وقت جن لڑکوں کا انتخاب کیا ہے ان کا معیار پہلے سے بہتر ہے۔ ہماری فیڈریشن ممبران سے میٹنگز چل رہی ہیں جو ہم صرف کام کرنے کے لیے کرتے ہیں۔ صدر پی ایچ ایف کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے ہماری باتیں مانیں۔ جب سے میں نے اور آصف باجوہ نے فیڈریشن کو جوائن کیا اس سے پہلے کے حالات کا موازنہ کرلیں ہم نے بہت بہتر کام کیا ہے جو جونیئر ٹیم ہم نے منتخب کی ہے کچھ کچھ سال تک آپ کو رزلٹ نظر آجائے گا جلد ہی تبدیلی لے کر آئیں گے اور آپ سب دیکھیں گے۔پاکستان ہاکی فیڈریشن کی جانب جونئیرکھلاڑیوں کے لیے نیشنل ہاکی اسٹیڈیم لاہورمیں ٹریننگ کمپ 12 جنوری سے لگایا جارہا ہے جس میں 55 کھلاڑیوں کو مدعوکیا گیاہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی