نوشہرہ،متعدد مساجد کے سولر سسٹم سے بیٹریاں چوری

نوشہرہ،متعدد مساجد کے سولر سسٹم سے بیٹریاں چوری

  



نوشہرہ (بیورورپورٹ) نوشہرہ سال 2019میں پبی نوشہرہ کلاں اور اضاخیل سمیت اکوڑہ خٹک میں چوروں نے ڈھیرے ڈال دیں تھے نوشہرہ کلاں میں نامعلوم چوروں نے کئی مساجد سے سولر سٹم کی بیٹریاں چوری کی اور کسی ایک چور کو نہ تو گرفتار کیا گیا اور نہ بیٹریاں برآمد کردی گئی اسی ہی سال واپڈا(پیسکو) کے اپریشن سپرڈینٹنٹ شکیل احمد کے گھر چوری کی سنگین واردات ہوئی تھی جس میں لاکھوں روپے مالیت کے طلائی زیورات اور دیگر قیمتی اشیاء شامل تھی لیکن اس کا بھی نہ مال برآمد ہوا اور نہ ملزمان گرفتار ہوئے ضلع نوشہرہ کی تاریخ کی سب سے بڑی ڈکیتی کی واردات جو کہ تھانہ اکوڑہ خٹک کے حدود میں سوات سرامیکس شیدو میں رونما ہوئی تھی جس میں ملوث ایک ہی ملزم نے تقریباً9کروڑ روپے کی بھاری رقم چوری کرکے فرارہو گیا تھا پولیس نے تو ملزم کو گرفتار کر دیا لیکن اس میں ایک کروڑ اور 26لاکھ روپے تاحال برآمد نہ ہو سکے جبکہ اسی سال کی آخری رات انکھوں کے معروف معالج ڈاکٹر گل شاد اور ان کی اہلیہ کو ان کی رہائشگاہ برلب جی ٹی روڈ تھانہ اضاخیل کے حدود میں واقع خٹ کلے خورد میں چار رکنی ڈکیت گروہ نے یرغمال بنا کر ان سے 20طلا طلائی زیورات، نقدی ایک عدد 30بور پستول لیکر فرار ہو گئے واضح رہے ان تمام وارداتوں میں نوشہرہ پولیس کی پیش رفت نہ ہونے کے برار ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر